Thursday , October 19 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی طلبہ کے اقامتی مدارس کے قیام پر عنقریب ایکشن پلان

اقلیتی طلبہ کے اقامتی مدارس کے قیام پر عنقریب ایکشن پلان

اسکیمات کے نگرانکار اے کے خاں کا محکمہ کے اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ اجلاس
حیدرآباد۔/7جنوری، ( سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت کی جانب سے اقلیتی طلبہ کیلئے 60اقامتی مدارس کے قیام کے فیصلہ پر عمل آوری کیلئے بہت جلد ایکشن پلان تیار کیا جائے گا۔ اقلیتی اسکیمات پر عمل آوری کے نگرانکار سینئر آئی پی ایس عہدیدار اے کے خاں نے آج اقلیتی بہبود کے اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ اجلاس منعقد کیا اور کابینہ میں کئے گئے فیصلوں پر عمل آوری کا جائزہ لیا۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل، منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن بی شفیع اللہ، ڈائرکٹر سکریٹری اردو اکیڈیمی پروفیسر ایس اے شکور، کمشنر وقف سروے معصومہ بیگم اور منیجنگ ڈائرکٹر کرسچین فینانس کارپوریشن نے اجلاس میں شرکت کی۔ ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو جناب اے کے خاں نے بتایا کہ حکومت اقامتی مدارس کے جلد آغاز میں سنجیدہ ہے اور آئندہ تعلیمی سال سے بہر صورت لڑکوں کیلئے30اور لڑکیوں کیلئے 30اقامتی مدارس کا آغاز کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ان مدارس کیلئے ٹیچنگ اور نان ٹیچنگ اسٹاف کے تقررات کا طریقہ کار طئے کرنے کیلئے جلد ہی محکمہ تعلیم کے عہدیداروں کے ساتھ اجلاس منعقد کیا جائے گا۔ اے کے خاں نے عہدیداروں کو بتایا کہ چیف منسٹر اقلیتوں کی تعلیمی ترقی کی اسکیمات میں کافی سنجیدہ ہیں اور 60اقامتی اسکولس کے آغاز کا مقصد تلنگانہ میں اقلیتوں کی تعلیمی پسماندگی دور کرنا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ایس سی، ایس ٹی اقامتی مدارس کی طرز پر اقلیتی اقامتی مدارس میں تمام سہولتیں فراہم کی جائیں گی اور قابل و ماہر اساتذہ کے ذریعہ نوجوان نسل کو تعلیم سے آراستہ کیا جائیگا۔ اے کے خاں کے مطابق پہلے سال پانچویں تا ساتویں جماعت سے اسکولس کا آغاز ہوگا اور ہر سال کلاسیس میں اضافہ ہوگا۔ ہر اسکول میں طلبہ کی تعداد 120 رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ تقریباً 2500 ملازمین پر مشتمل تقررات کئے جائیں گے جن میں ٹیچنگ اور نان ٹیچنگ اسٹاف شامل ہوں گے۔ اقامتی اسکولس کے آغاز کیلئے علحدہ سوسائٹی تشکیل دی جارہی ہے جس کے لئے بہت جلد احکامات جاری کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ اقلیتی بہبود میں 80جائیدادوں کو حکومت نے منظوری دی ہے تاکہ اقلیتی بہبود میں اسٹاف کی کمی کے مسئلہ کو حل کیا جاسکے۔ ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسر کے عہدہ کیلئے دیگر محکمہ جات سے ڈیپوٹیشن پر عہدیداروں کو حاصل کیا جائے گا۔ حکومت نے پہلی مرتبہ اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسر کا عہدہ قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ ہر ضلع میں اقلیتی بہبود کی کارکردگی اور اسکیمات پر عمل آوری میں بہتری ہو۔ دیگر ماتحت عہدیداروں کے تقررات راست طور پر یا تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کے ذریعہ کئے جائیں گے ۔اس سلسلہ میں بہت جلد قطعی فیصلہ کیا جائے گا۔ حیدرآباد کے اقلیتی بہبود ڈائرکٹوریٹ میں 20 ملازمین کے تقررات کئے جائیں گے۔ اجلاس میں تلنگانہ میں زیر تعمیر اردو گھر۔ شادی خانوں کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا اور ان کی عاجلانہ تکمیل کا فیصلہ کیا گیا۔ اس سلسلہ میں ضلع کلکٹرس سے رپورٹ طلب کی جائے گی۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے اقلیتی بہبود کی اسکیمات پر مؤثر عمل آوری کیلئے  اے کے خاں کی قیادت میں اعلیٰ اختیاری کمیٹی تشکیل دی ہے جو اسکیمات میں شفافیت کو یقینی بنائے گی۔ اے کے خاں اینٹی کرپشن بیورو عہدیداروں کے ساتھ اقلیتی اسکیمات پر عمل آوری کی راست طور پر نگرانی کررہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT