Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی طلبہ کے لیے انگلش میڈیم اقامتی اسکولس قائم کرنے کی تیاریاں

اقلیتی طلبہ کے لیے انگلش میڈیم اقامتی اسکولس قائم کرنے کی تیاریاں

جون سے اسکولس کا آغاز ، چیرمین نگران کمیٹی اقلیتی اسکیمات اے کے خاں کا جائزہ اجلاس سے خطاب
حیدرآباد۔/14جنوری، ( سیاست نیوز) اقلیتی طلباء و طالبات کیلئے 60انگلش میڈیم اقامتی اسکولس کے قیام کی تیاریاں تیز ہوچکی ہیں۔ محکمہ اقلیتی بہبود نے آئندہ تعلیمی سال جون سے ان اسکولس کے آغاز کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت کی جانب سے اقلیتی اسکیمات پر عمل آوری کی نگرانی کیلئے قائم کردہ اعلیٰ اختیاری کمیٹی کے صدرنشین اے کے خاں ( آئی پی ایس ) نے آج اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کے ساتھ اقامتی اسکولس کے آغاز کا جائزہ لیا۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل، منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن بی شفیع اللہ اور سکریٹری ڈائرکٹر اردو اکیڈیمی پروفیسر ایس اے شکور اجلاس میں شریک تھے۔ اے کے خاں نے عہدیداروں سے کہا کہ وہ آئندہ تعلیمی سال سے اقامتی اسکولس کے آغاز کو یقینی بنائیں کیونکہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اقلیتوں کی تعلیمی ترقی کے سلسلہ میں کافی سنجیدہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایس سی، ایس ٹی طلباء کیلئے قائم کردہ معیاری اقامتی اسکولس کی طرح اقلیتی اسکولس چلانے کیلئے علحدہ سوسائٹی قائم کی جائے گی۔ سوسائٹی کا رجسٹریشن جلد ہی مکمل ہوگا اور منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن سوسائٹی کے سکریٹری ہوں گے۔ انہوں نے بتایا کہ ہر اسکول میں طلباء کی تعداد 120 رہے گی اور پانچویں تا ساتویں جماعت سے تعلیم کا آغاز ہوگا۔

 

لڑکیوں کیلئے 30اور لڑکوں کیلئے 30اسکولس قائم کئے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ جنوری سے کرایہ کی عمارتوں کی نشاندہی شروع کی جائے گی اور ضلع کلکٹرس سے خواہش کی گئی ہے کہ مستقل عمارت کی تعمیرکیلئے اراضی کی نشاندہی کریں۔ اے کے خاں کے مطابق جون سے کرایہ کی عمارتوں میں اسکولس کام کرنا شروع کردیں گے۔ اسٹاف کے تقررات کا عمل بھی جلد شروع ہوگا۔ ٹیچنگ اسٹاف کے تقررات پبلک سرویس کمیشن یا ڈی ایس سی کے ذریعہ کئے جائیں گے۔ انہوں نے اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کو مشورہ دیا کہ وہ ہر ضلع کا دورہ کرتے ہوئے اقلیتوں میں شعور بیداری کی مہم چلائیں۔ اجلاس میں طئے کیا گیا کہ اقلیتی عہدیداروں کو مختلف اضلاع کی ذمہ داری دی جائے اور وہ ان اضلاع کا دورہ کرتے ہوئے اسکولس کے آغاز کو یقینی بنائیں۔ اے کے خاں نے عہدیداروں کے ساتھ انیس الغرباء کا بھی دورہ کیا اور انتظامات کا جائزہ لیا۔ حکومت نے انیس الغرباء سے متصل آر اینڈ بی کی 4000 گز اراضی محکمہ اقلیتی بہبود کو الاٹ کی ہے تاکہ عصری سہولتوں کے ساتھ یتیم خانہ تعمیر کیا جائے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے اراضی کے حصول اور عمارت کی تعمیر کی تفصیلات سے واقف کرایا۔ اے کے خاں نے انیس الغرباء میں طلباء کی تعداد میں کمی کی وجوہات معلوم کیں اور تعداد میں اضافہ اور انتظامات میں بہتری کی ہدایت دی۔ انیس الغرباء کی توسیع کیلئے وہاں لڑکیوں کیلئے رہائش کے علاوہ اعلیٰ تعلیم کی سہولتیں فراہم کی جائیں گی۔ اے کے خاںنے کہا کہ حکومت اعلیٰ تعلیم کے بعد ملازمت اور شادی کا انتظام کرے گی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT