Sunday , August 20 2017
Home / عرب دنیا / اقوام متحدہ کے پہلے افریقی سکریٹری جنرل بطرس غالی کا قاہرہ میں انتقال

اقوام متحدہ کے پہلے افریقی سکریٹری جنرل بطرس غالی کا قاہرہ میں انتقال

قاہرہ ۔ 16 ۔ فروری (سیاست ڈاٹ کام) مصر کے ممتاز سفارتکار بطرس بطرس غالی کا آج 93 سال کی عمر میں انتقال ہوگیا۔ انہوں نے ملک کی اسرائیل کے ساتھ تاریخی امن معاملت کو قطعیت دینے کیلئے مذاکرات میں اہم رول ادا کیا تھا ۔ اس کے علاوہ وہ اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل بھی رہے۔ بطرس غالی کا مصر کے عیسائی سیاسی خاندان سے تعلق رہا ہے اور وہ افریقی خطہ سے اقوام متحدہ کے پہلے سربراہ رہے۔ انہوں نے 1992 ء میں یہ عہدہ ایسے وقت سنبھالا جبکہ دنیا بھر میں ڈرامائی تبدیلیاں واقع ہورہی تھیں۔ سویت یونین کا شیرازہ بکھر گیا، سرد جنگ ختم ہوئی اور امریکہ کی قیادت میں ایک قطبی دور کا آغاز ہوا۔ کلنٹن انتظامیہ کے ساتھ چار سال تک روابط میں نشیب و فراز آتے رہے ، اس کے بعد امریکہ نے 1996 ء میں ان کے عہدہ کی تجدید روک دی۔ اس طرح وہ واحد اقوام متحدہ سکریٹری جنرل رہے جنہوں نے صرف ایک میعاد پوری کی۔ کوفی عنان کو ان کا جانشین مقرر کیا گیا تھا۔ اقوام متحدہ سیکوریٹی کونسل کے موجودہ صدر اور وینزویلا کے سفیر رافیل رمی ریز نے آج سیشن کے آغاز پر بطرس غالی کے انتقال کی اطلاع دی۔ 15 رکنی کونسل نے انہیں خراج عقیدت پیش کی۔ بطرس غالی کا آج قاہرہ کے ہاسپٹل میں انتقال ہوا۔ ان کی اقوام متحدہ میں پانچ سالہ میعاد متنازعہ رہی اور ان کی کوشش یہ تھی کہ اقوام متحدہ عالمی سوپر پاور امریکہ سے آزاد ہوجائے۔ بعض مبصرین انہیں افریقہ میں نسل کشی روکنے کا بھی الزام عائد کرتے ہیں۔سربیا میں جولائی 1995 ء کے دوران 8000 مسلمانوں کے قتل عام پر انہیں سخت تنقیدوں کا نشانہ بننا پڑا۔

TOPPOPULARRECENT