Tuesday , September 19 2017
Home / سیاسیات / الیکٹرانک ووٹنگ مشین کو ہیک کیجئے الیکشن کمیشن کا کھلا چیلنج

الیکٹرانک ووٹنگ مشین کو ہیک کیجئے الیکشن کمیشن کا کھلا چیلنج

نئی دہلی ۔ 12 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) الیکشن کمیشن نے سیاسی جماعتوں اور ماہرین کو کھلا چیلنج کرتے ہوئے کہا کہ ’’آئیے  اور الیکٹرانک ووٹنگ مشین کو ہیک کرنے کی کوشش کیجئے، اس میں چھیڑچھاڑ کا ثبوت پیش کیجئے‘‘۔ کمیشن نے اس چیلنج کیلئے کوئی تاریخ مقرر نہیں کی لیکن وعدہ کیاکہ مئی کے پہلے ہفتہ میں تمام سیاسی جماعتوں اور ماہرین کو مدعو کیا جائے گا اور یہ چیلنج ان کیلئے 10 دن تک برقرار رہے گا۔ الیکشن کمیشن نے دعویٰ کیا کہ آخری مرتبہ 2009ء میں اسی طرح کا ایک پروگرام منعقد کیا گیا تھا جہاں ملک کے مختلف حصوں سے لائے گئے 100 الیکٹرانک مشینس وگیان بھون میں رکھے گئے تھے۔ کمیشن نے دعویٰ کیا کہ کوئی بھی الیکٹرانک ووٹنگ مشین کو ہیک نہیں کرسکا۔ چیف منسٹر دہلی اور عام آدمی پارٹی لیڈر اروند کجریوال نے گذشتہ ہفتہ چیف الیکشن کمشنر نسیم زیدی سے ملاقات کرتے ہوئے ووٹنگ مشین کے بارے میں شکایت کی تھی۔ انہیں بتایا گیا کہ انتخابی پینل کھلے چیلنج کا منصوبہ رکھتا ہے۔ اس کے لئے الیکشن کمیشن کے ہیڈکوارٹر نروچن سدن کا انتخاب کیا جائے گا۔
الیکٹرانک ووٹنگ مشین میں چھیڑچھاڑ ممکن نہیں : امریندر سنگھ
نئی دہلی ۔ 12 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر پنجاب امریندر سنگھ نے آج کہا ہیکہ اگر الیکٹرانک ووٹنگ مشین میں چھیڑچھاڑ کی گنجائش ہوتی تو وہ اقتدار پر نہ آتے۔ انہوں نے کانگریس پارٹی سے متضاد موقف اختیار کیا ہے۔ پارٹی نے الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے بارے میں شبہات کا اظہار کیا تھا۔ امریندر سنگھ پارٹی کے دوسرے لیڈر ہیں جنہوں نے کہا کہ اگر چھیڑچھاڑ ہوتی تو اکالی دل کو اقتدار حاصل ہوتا۔ ویرپا موئیلی کے بعد وہ پارٹی کے دوسرے سینئر لیڈر ہیں جنہوں نے الیکٹرانک ووٹنگ مشین کا دفاع کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT