Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / امبیڈکر کی ہمہ پہلو شخصیت کو بی جے پی نے اُجاگر کیا

امبیڈکر کی ہمہ پہلو شخصیت کو بی جے پی نے اُجاگر کیا

دلتوں کو پارٹی سے قریب کرنے کی کوشش، پارلیمانی پارٹی سے مودی کا خطاب ۔ ارکان سے ایوان میں حاضر رہنے وینکیا نائیڈو کی خواہش
نئی دہلی ۔ 8 ڈسمبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیراعظم نریندر مودی نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ پیشرو حکومتوں میں کسی نے بھی دلتوں کی نمائندہ شخصیت بی آر امبیڈکر کو وہ مقام و ہ احترام نہیں دیا جو انھوں (مودی ) نے دیا ہے ۔ انھوں نے پارٹی ارکان پارلیمنٹ پر زور دیا کہ امبیڈکر کے نظریات اور اُن کے اصولوں کو عوام تک پہنچائے ۔ پارلیمانی پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے نریندر مودی نے بی جے پی کی سرکردہ شخصیت اٹل بہاری واجپائی کی مجوزہ سالگرہ اور ساتھ ہی ساتھ سوامی ویویکا نند کی یوم پیدائش تقاریب کا بھی ذکر کیا اور کہا کہ سابق وزیراعظم کی 25 ڈسمبر کو سالگرہ کے موقع پر ایسے پراجکٹ شروع کریں جو اُن کے شایان شان ہو ۔ بی جے پی کی جانب سے دلتوں کو راغب کرنے کی کوشش کے طورپر مودی نے کہا کہ اُن کی حکومت نے امبیڈکر کو زیادہ سے زیادہ عزت دی ہے اور مرکز کی جانب سے ڈاکٹر امبیڈکر سے متعلق کئی پروگرامس کا انعقاد عمل میں لایا گیا ۔ اس کے علاوہ 26 نومبر کو ’’یوم دستور‘‘ کا بھی اعلان کیا گیا اور اُن کے اعزاز میں خصوصی سکے بھی جاری کئے گئے ۔ پارٹی ذرائع نے بتایا کہ نریندر مودی نے ارکان پارلیمنٹ سے کہاکہ امبیڈکر کو اب تک ایک دلت رہنما اور دستوری سازی میں اُن کے رول کو نمایاں کرتے ہوئے پیش کیا جاتا رہا ہے لیکن اُن کی حکومت نے امبیڈکر کی دیگر خوبیوں بشمول اُن کے معاشی نظریہ کو عوام کے سامنے پیش کیا ہے ۔ مختلف وزارتوں نے اُن کے کارناموں کو اُجاگر کرنے کیلئے لٹریچر تیار کیا ہے ۔ نریندر مودی نے اُن کی 125 ویں یوم پیدائش تقاریب کیلئے حکومت کی جانب سے سال بھر منائے جانے والے پروگرامس کا بھی تذکرہ کیا ۔

انھوں نے سوامی ویویکانند کی یوم پیدائش کا ذکر کرتے ہوئے اسے قومی یوم نوجوانان کے طورپر منایا جائے گا ۔ وزیراعظم خود سوامی ویویکانند سے کافی متاثر ہیں اور ماضی میں وہ متعدد مرتبہ اس کا ذکر کرچکے ہیں ۔ انھوں نے پارٹی قائدین سے خواہش کی کہ وہ سوامی ویویکانند کے نظریہ کو پھیلائیں اور نوجوانوں کو بی جے پی سے قریب کریں۔ مودی نے ارکان پارلیمنٹ سے یہ بھی کہا کہ وہ واجپائی کی سالگرہ کے موقع پر اپنے حلقوں میں متعدد بہبودی پراجکٹ شروع کریں ۔ وزیر پارلیمانی اُمور ایم وینکیا نائیڈو نے بھی ارکان پارلیمنٹ سے خطاب کیا اور زیرتصفیہ بلس کی منظوری کیلئے پارلیمنٹ میں تمام ارکان کی حاضری کو انتہائی اہم قرار دیا ۔ ذرائع نے بتایا کہ وینکیا نائیڈو نے جاریہ ہفتے پارلیمنٹ کے دونوں ایوان میں پیش ہونے والے ایجنڈے کے بارے میں بات کی ۔ ان میں راجیہ سبھا میں پیش کردہ جی ایس ٹی بل بھی شامل ہے۔ انھوں نے بتایا کہ گزشتہ ہفتہ تین بلس منظور کئے گئے ۔ حکومت کی یہ کوشش ہے کہ جاریہ مانسون سیشن کے دوران جی ایس ٹی بل کی منظوری یقینی بنائے اور اس ضمن میں تعطل ختم کرنے کے مقصد سے وزیراعظم نریندر مودی نے اپوزیشن قائدین سے ربط بھی قائم کیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT