Saturday , July 29 2017
Home / Top Stories / امرناتھ یاتریوں کی سکیورٹی میں اضافہ کیلئے راج ناتھ کی ہدایت

امرناتھ یاتریوں کی سکیورٹی میں اضافہ کیلئے راج ناتھ کی ہدایت

قومی سلامتی مشیر ، وزارت داخلہ، انٹلی جنس عہدیداروں سے صورتحال پر بات چیت
نئی دہلی 11 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) وزیرداخلہ راج ناتھ سنگھ نے جموں و کشمیر کی صورتحال کا جائزہ لیا اور دہشت گرد حملے میں سات یاتریوں کی ہلاکت کے پیش نظر امرناتھ یاتریوں کی سکیوریٹی میں اضافے کا حکم دیا۔ سرکاری ذرائع نے کہاکہ وزیرداخلہ نے متعلقہ عہدیداروں کے ساتھ ایک گھنٹہ طویل اجلاس کے دوران بالخصوص ہمالیہ کے دامن میں 12,756 فٹ بلند پہاڑیوں پر واقع مندر کے دو راستوں کے علاوہ وادی کشمیر کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لیا۔ قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوول، وزارت داخلہ، انٹلی جنس اداروں اور مرکزی نیم فوجی فورسیس کے سرکردہ عہدیداروں نے اجلاس میں شرکت کی۔ جس میں امرناتھ یاتریوں کی سکیوریٹی اور مستقبل میں حملوں کی روک تھام کے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ذرائع نے کہاکہ وزیرداخلہ نے یاتریوں کیلئے اضافی سکیوریٹی کو یقینی بنانے پر زور دیا۔ امرناتھ یاترا 29 جون کو شروع ہوئی اور 7 اگسٹ کو ختم ہوگی۔ قومی سلامتی کے مشیر ڈوول نے اجلاس کے فوری بعد وزیراعظم نریندر مودی کو امرناتھ یاتریوں کی سکیوریٹی کیلئے کئے جانے والے اقدامات کے علاوہ اجلاس میں مختلف مسائل پر کی گئی بات چیت کی تفصیلات سے واقف کروایا۔ مملکتی وزیرداخلہ ہنس راج اہیر کی قیادت میں ایک مرکزی ٹیم ہمالیہ کی غاروں میں واقع لارڈ شیوا کے مندر کو جانے والے یاتریوں کی سکیوریٹی کا جائزہ لینے کے لئے جموں و کشمیر کا دورہ کررہی ہے۔ سی آر پی ایف کے ڈائرکٹر جنرل آر آر بھٹناگر، یاترا کے راستوں پر مرکزی فورسیس کی تعیناتی کا جائزہ لینے کے لئے پہلے ہی سرینگر پہونچ
گئے ہیں۔ دہشت گردوں نے گزشتہ روز کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں ایک بس پر حملے کے ذریعہ بشمول چھ خواتین سات یاتریوں کو ہلاک اور دیگر 19 کو زخمی کردیا تھا۔ یاترا کے راستوں کی سکیوریٹی کیلئے ریاستی پولیس فورسیس کے علاوہ 21,000 نیم فوجی فورسیس تعینات کئے گئے ہیں۔ یاترا کے راستوں پر گزشتہ سال کے مقابلہ رواں سال 9,500 زائد نیم فوجی فورسیس تعینات کئے گئے ہیں۔ تاہم بس میں سفر کرنے والے ایسے یاتریوں کو بھی خاطر خواہ سکیوریٹی فراہم کی جارہی ہے جو گاڑیوں کے اصل قافلہ میں شامل نہیں ہیں۔ ضلع اننت ناگ میں گزشتہ شب 8.20 بجے ایک بس پر اُس وقت حملہ کیا گیا تھا جب وہ سرینگر سے جموں روانہ ہورہی تھی۔ پولیس نے کہاکہ بس ڈرائیور نے یاترا کے لئے مقررہ ضابطہ کی خلاف ورزی کی تھی۔ ضابطہ کے تحت یاترا کی کسی بھی گاڑی کو 7 بجے شام کے بعد شاہراہ پر نہیں رہنا چاہئے کیوں کہ مقررہ وقت کے بعد سکیوریٹی ڈھال ہٹالی جاتی ہے۔

امرناتھ یاتریوں پر حملہ ، امریکہ کا اظہار مذمت
نئی دہلی 11 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے امرناتھ یاتریوں پر حملے کی مذمت کی اور کہاکہ وہ ہر قسم کی دہشت گردی کی مذمت کرتا ہے۔ امریکی سفیر نے اپنے سرکاری ٹوئٹر پوسٹ پر لکھا کہ ’’وہ (امریکہ) تمام خاندانوں اور تمام متاثرین سے گہری تعزیت کا اظہار کرتا ہے۔ امرناتھ یاتریوں پر حملے پر ہمیں افسوس ہے اور ہر قسم کی دہشت گردی کی مذمت کرتے ہیں۔ تمام متاثرین اور خاندانوں سے گہری تعزیت کا اظہار کرتے ہیں‘‘۔

TOPPOPULARRECENT