Friday , May 26 2017
Home / Top Stories / امریکہ اور مغرب مسلم دنیا کے دشمن نہیں: سعودی عرب

امریکہ اور مغرب مسلم دنیا کے دشمن نہیں: سعودی عرب

الجبیر ۔ 19 مئی (سیاست ڈاٹ کام) سعودی وزیرِ خارجہ کا کہنا ہے کہ امریکہ اور مغرب اسلامی دنیا کے دشمن نہیں ہیں۔وزیر خارجہ عادل بن احمد الجبیر نے یہ بات انہوں نے ڈونلڈ ٹرمپ کے سعودی عرب کے دورے سے پہلے کہی ہے۔امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ صدر بننے کے بعد اپنے پہلے غیر ملکی دورے میں سعودی عرب، اسرائیل اور ویٹیکن جا رہے ہیں۔ یعنی تینوں ابراہیمی مذاہب اسلام، یہودیت اور عیسائیت کے گھروں میں۔ لیکن جس کا ذکر زیادہ ہو رہا ہے وہ ہے ان کا پہلا پڑاؤ سعودی عرب۔ جہاں وہ تین مختلف اجلاسوں میں سعودی اور اسلامی دنیا کے رہنماؤں سے ملاقات کریں گے۔جس شخص کو حال ہی میں چھ مسلم ممالک سے تعلق رکھنے والے افراد کے امریکہ آنے پر سفری پابندیاں لگانے کی کوششوں کی وجہ سے اسلام مخالف کہا جا رہا تھا لیکن وہ اپنا پہلا ہی دورہ کسی مسلم ملک کا کرسعودی حکومت بھی ماضی کی باتوں کو بھول جانا چاہتی ہے۔ حال ہی میں سعودی اور امریکی اہلکاروں کے درمیان رابطوں کے بعد ماحول بدل گیا ہے۔ سعودی عرب امریکہ کو اپنا ایک بڑا اور بھروسہ مند اتحادی سمجھتا ہے اور صدر ٹرمپ کے دورے کو ایک تاریخی دورے سے تعبیر کر رہا ہے۔سعودی وزیرِ خارجہ عادل بن احمد الجبیر کہتے ہیں: ‘یہ اسلامی دنیا کے لیے ایک بہت بھرپور پیغام ہے کہ امریکہ اور مغرب آپ کے دشمن نہیں ہیں۔ یہ مغرب کے لیے بھی بھرپور پیغام ہے کہ اسلام آپ کا دشمن نہیں۔ اس دورے سے اسلامی دنیا اور مغرب کے درمیان عموماً اور امریکہ کے درمیان خصوصاً ڈائیلاگ اور مکالمہ بدل جائے گا۔ یہ شدت پسندوں کو تنہا کر دے گا چاہے وہ ایران ہو، دولتِ اسلامیہ ہو یا القاعدہ جو کہتے ہیں کہ مغرب ہمارا دشمن ہے۔’ رہے ہیں۔اسلامی دنیا کے رہنماؤں کے ساتھ ٹرمپ کی ملاقاتوں کا محور دہشت گردی اور شدت پسندت رہے گا۔ ان رہنماؤں میں پاکستان کے وزیرِ اعظم نواز شریف بھی ہوں گے۔ جن کی فوج کے سابق سپہ سالار اب سعودی سعودی عرب کی قیادت میں اسلامی فوج کے سپہ سالار بھی ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT