Wednesday , August 23 2017
Home / Top Stories / امریکہ سے اس سال کتنے میزائیل اور بم خریدے؟

امریکہ سے اس سال کتنے میزائیل اور بم خریدے؟

حسن روحانی کا استفسار، اسلام کے بارے میں منفی تاثر ختم کرنے پر زور

دہشت گردی کو بموں سے ختم نہیں کیا جاسکتا
تہران ۔ /27 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ایران کے صدر حسن روحانی نے مسلم ممالک پر زور دیا ہے کہ وہ دنیا میں اسلام کے تعلق سے موجودہ رائے کو تبدیل کرنے کی کوشش کریں ۔ انہوں نے کہا کہ آج کی سائبر دنیا میں اسلام کی منفی شبیہہ کو ختم کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے تہران میں ’’عالم اسلام کے موجودہ بحران ‘‘ پر بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے یہ بات کہی ۔ حسن روحانی نے کہا کہ اس وقت تشدد ، دہشت گردی اور قتل کے اکثر و بیشتر واقعات اسلامی دنیا میں پیش آرہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ تمام اسلامی ممالک کو یہاں تک کہ وہ بھی جنہوں نے آج اپنے پڑوسیوں پر بم گرائے اور میزائیل داغے ، یہ دعوت دیتے ہیں کہ وہ صحیح راہ اختیار کریں ۔ انہوں نے اس ضمن میں کسی ملک کا نام نہیں لیا ۔ واضح رہے کہ یمن میں حوثی باغیوں کو شیعہ ایران کی تائید حاصل ہے جب کہ سنی علاقائی حریف سعودی عرب یہاں اتحادی فوج کی قیادت کررہا ہے۔ انہوں نے سوال کیا کہ اس سال آپ نے امریکہ سے کتنے بم اور میزائیل خریدے ؟ اگر آپ یہ رقم بموں اور میزائیل کی خریدی کے بجائے غریب مسلمانوں میں تقسیم کردیتے تو آج کوئی بھوکا نہیں سوتا ۔ واضح رہے کہ ملک شام میں بھی بشارالاسد حکومت کو ایران کی تائید حاصل ہے ۔ حسن روحانی نے کہا کہ اگر بعض گروپس جیسے داعش اپنے سپاہیوں کی بھرتی کررہے ہیں تو اس کی وجہ مالی اور ثقافتی غربت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایک ’’اسلامی سماج‘‘ کے ذریعہ ہی اس طرح کی غربت کو ختم کیا جاسکتا ہے ۔ دہشت گردی کو بموں کے ذریعہ تباہ نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ ہم عرصہ دراز سے اتحاد کی بات کرتے آرہے ہیں کیا اسلامی دنیا میں باہمی معاشی روابط کے بغیر ایسا اتحاد ممکن ہے ؟ انہوں نے کہا کہ شام اور عرق کی لڑائی سے صرف اسرائیل اور انہیں جو مسلمانوں کے خلاف ہیں فائدہ ہورہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT