Tuesday , May 30 2017
Home / دنیا / امریکہ سے ایل این جی درآمد کرنے پردھان کی امریکی انرجی سکریٹری سے ملاقات

امریکہ سے ایل این جی درآمد کرنے پردھان کی امریکی انرجی سکریٹری سے ملاقات

ہندوستان توانائی کی ضرورتوں میں اضافہ کیساتھ ابھرتی معیشت، دونوں ممالک کا مشترکہ مفاد : رک پیری کے تاثرات
واشنگٹن ۔ 9 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی وزیرمملکت برائے پٹرولیم و قدرتی گیس دھرمیندر پردھان نے توانائی کے نئے سکریٹری رک پیری کے ساتھ تفصیلی بات چیت کی جس کا موضوع امریکہ سے ایل این جی کی درآمد اور امریکہ میں توانائی کے سیکٹر میں ہندوستان کی سرمایہ کاری تھا۔ یاد رہیکہ دھرمیندر پردھان نے رک پیری کے ساتھ اپنے اچانک کئے جانے والے دورہ واشنگٹن کے دوران کی اور ہند ۔ امریکہ کے درمیان توانائی کے شعبہ میں باہمی تعاون کے موضوع پر بات چیت کی خصوصی طور پر لیکیوفائیڈ نیچرل گیس (ایل این جی) اور شیل سیکٹرس میں ہندوستان کی سرمایہ کاری اور آئندہ سال کے اوائل سے ہندوستان کیلئے امریکہ سے ایل این جی کہ امکانی درآمد بات چیت کا موضوع رہا۔ اس موقع پر پیری نے ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہاکہ ہند ۔ امریکہ کے درمیان توانائی کے شعبہ میں باہمی تعاون وقت کی اہم ضرورت ہے کیونکہ یہ دونوں ہی ممالک کے مفاد میں ہوگا اور سب سے اہم بات یہ ہیکہ ہندوستانی معیشت میں توسیع ہورہی ہے لہٰذا اس کی توانائی کی ضروریات میں بھی اضافہ ہوگا۔ پردھان ہوسٹن سے واشنگٹن پہنچے تھے جہاں انہوں نے بارسوخ سیراویک انرجی کانفرنس میں شرکت کرتے ہوئے نئے ہائیڈرو کاربن ایکسپلوریشن اینڈ لائسسنگ پالیسی (HELP) کی لانچنگ بھی کی۔ علاوہ ازیں انہوں نے اپنے روسی، سری لنکائی، کینیڈین اور سعودی عرب کے ہم منصبوں سے بھی ملاقات کی۔ توقع کی جارہی ہیکہ سعودی کے وزیرتوانائی خالدالفلیح عنقریب ہندوستان کا دورہ کریں گے۔ دھرمیندر پردھان نے سرکاری ملکیت ابوظہبی نیشنل آئیل کمپنی کے سی ای او بابی ڈوڈلی، برٹش پٹرولیم کے سی ای او اور انٹرنیشنل انرجی ایجنسی کے ایگزیکیٹیو ڈائرکٹر فتح بیرول سے بھی ملاقات کی۔

یہاں اس بات کا تذکرہ بھی ضروری ہیکہ مسٹر پیری نے مذکورہ محکمہ کی ذمہ داری گذشتہ ہفتہ ہی سنبھالی ہے اور فی الحال واشنگٹن میں رہتے ہوئے موصوف وزیراعظم ہندر نریندر مودی کے ہوسٹن کے دورہ کو قطعیت دینے میں مصروف ہیں۔ ان کا کہنا ہیکہ نریندر مودی کے دورہ سے دونوں ممالک کے تعلقات کو ایک نئی جہت حاصل ہوگی۔ لہٰذا مودی کے دورہ کی تاریخوں کو قطعیت دیئے جانے کا کام جاری ہے۔ دوسری طرف خود دھرمیندر پردھان نے پیری کو ہند ۔ امریکہ توانائی بات چیت کے آئندہ مرحلہ کیلئے ہندوستان کے دورہ کی دعوت دی ہے اور ان کا کہنا ہیکہ پیری جس طرح نریندر مودی کے دورہ کو قطعیت دینے مصروف ہیں، ان کا (پیری) یہ پیغام اور تیاری کے بارے میں وہ (پردھان) وزیراعظم نریندر مودی سے ضرور تذکرہ کریں گے۔ پردھان نے کہا کہ مسٹر پیری کا اس بات پر ایقان ہیکہ ہند ۔ امریکہ تعلقات میں مزید استحکام کیلئے توانائی کا شعبہ اہمیت کا حامل ہوگا۔ منگل کے روز دھرمیندر پردھان نے ٹیکساس کے گورنر گریگ اباٹ سے ملاقات کی تھی، جہاں گورنر نے ہندوستانی نژاد امریکی شہریوں کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ وہ جلد ہی ایک تجارتی وفد کے ساتھ ہندوستان کا دورہ کرنے کا منصوبہ بنارہے ہیں۔ دھرمیندر پردھان کے دورہ کے دوران آئیل انڈیا نے ہوسٹن یونیورسٹی کے ساتھ CO2 انجکشن ٹیکنالوجی کے ہندوستانی ریاست آسام میں پروڈکشن میں اضافہ کیلئے ایک یادداشت مفاہمت پر دستخط کئے۔ واضح رہیکہ پردھان نے اپنے امریکی دورہ کا آغاز ہوسٹن سے کیا تھا جہاں انہوں نے MIT، ہارورڈ کینیڈی اسکول اور فلیچر اسکول آف لاء اینڈ ڈپلومیسی موقوعہ ٹفس یونیورسٹی کے طلباء اور اساتذہ سے ملاقات کی تھی۔ MIT میں انہوں نے سابق توانائی سکریٹری پروفیسر ارنیسٹ مونیز سے بھی ملاقات کی جبکہ بوسٹن اور ہوسٹن میں انہوں نے وہاں آباد ہندوستانیوں سے بھی ملاقات کی تھی جن میں ہندوستانی نژاد سائنسداں بھی شامل ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT