Monday , September 25 2017
Home / دنیا / امریکہ سے بچنے آئی ایس آئی نے حقانی کو طالبان۔2بنادیا

امریکہ سے بچنے آئی ایس آئی نے حقانی کو طالبان۔2بنادیا

حقانی نیٹ ورک کا پاکستانی طالبان میں انضمام سے طالبان کے مالی مسائل کی یکسوئی
نیویارک۔8مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان کی طاقتور آئی ایس آئی نے حقانی نیٹ ورک کے سربراہ سراج الدین حقانی کو گذشتہ سال طالبان کا قائد بنادیا تاکہ انہیں امریکہ سے محفوظ رکھا جاسکے ۔ ذرائع ابلاغ کی ایک رپورٹ کے بموجب روزنامہ ’ نیویارک ٹائمز‘‘ نے افغان اور امریکی عہدیداروں کے حوالے سے خبر دی ہے کہ خوفناک حقانی عسکریت پسند نیٹ ورک میں قریبی روابط تھے ۔طالبان کی قیادت اور حقانی نٹ ورک کی قیادت میں گہری دوستی تھی ۔ افغان شورش کو جاریہ سال حقانی نیٹ ورک کے سینئر قائد نے طالبان کی جارحیت قرار دیتے ہوئے ہلچل مچادی تھی ۔ خبر میں کہا گیا ہے کہ افغانستان کے محکمہ سراغ رسانی کے سابق سربراہ رحمت اللہ نبی نے کہا کہ آئی ایس آئی نے سراج الدین کو طالبان کا نائب امیر بنادیا تاکہ انہیں تحفظ فراہم کیا جاسکے ‘ اس لئے امن مذاکرات سنگین مشکلات کا شکار ہوگئے ۔ امریکی یہ نہیں کہہ سکیں گے ہم نے قائد کے ساتھ امن قائم کرلیا تھالیکن نائب قائد کے ساتھ نہیںکرسکے ۔

نبیل جو اب زخمی افغان فوجیوں کیلئے ایک فلاحی تنظیم چلاتے ہیں کہا کہ اس انضمام کو اس حقیقیت سے مدد ملی کہ حقانی نیٹ ورک مالیہ کیلئے جدوجہد کررہا تھا جب کہ اس کیلئے مالیہ حاصل کرنے والے شخص کو 2013ء میں اسلام آباد کے قریب گولی مار کر ہلاک کردیا گیاتھا ۔ طالبان کو حقانی کی مہارت کی ضرورت تھی تاکہ بیک وقت کئی حملے کرسکے ۔ بریگیڈیئر جنرل چارلس کلیولینڈ نے جو امریکہ کے ترجمان اعلیٰ اور ناٹو افواج کے افغانستان میں ترجمہ اعلیٰ ہیں کہا کہ آج سراج الدین روزانہ فوجی کارروائیوں میں طالبان کیلئے حصہ لیتے ہیں اور ہمیںیقین ہے کہ وہ متبادل گورنروں کے تقرر میں بھی ملوث ہیں ۔ حقانی نیٹ ورک طالبان کمان کے ساتھ قریبی یکجہتی رکھتے ہیں ۔علاوہ ازیںاوباما انتظامیہ کیلئے مشکلات پیدا کرتے ہیں ۔ پاکستان اور افغانستان کے درمیا کشیدگی پیدا کرتے رہتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT