Tuesday , May 30 2017
Home / دنیا / امریکہ میں کمسن مسلم باکسر حجاب میں لڑنے کے مقدمہ میں کامیاب

امریکہ میں کمسن مسلم باکسر حجاب میں لڑنے کے مقدمہ میں کامیاب

واشنگٹن۔23اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) ایک 16سالہ مسلم امریکی باکسر جو 2020ء کے ٹوکیو اولمپکس میں حجاب پہن کر کشتی کے مقابلہ میں شرکت کرنا چاہتی تھی لیکن اُسے روک دیا گیا تھا ۔ ایک مقدمہ میں کامیاب قرار دی گئی ۔ چنانچہ وہ 2020ء کے ٹوکیو اولمپکس میں حجاب پہن کر اپنے بازوں اور ٹانگوں کو پوری طرح پوشیدہ رکھتے ہوئے مقابلہ میں شریک ہوگی ۔ امیہ ظفر متوطن اوکڈیل منی سوٹا کو اپنے مذہب اور باکسنگ میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنا تھا لیکن اُس نے اس اصول کے خلاف عدالت سے رجوع ہونے کا فیصلہ کیا اور پورے چہرے ‘ بازوؤں اور ٹانگوں کو پوشیدہ رکھتے ہوئے مقابلہ میں شرکت کی عدالتی اجازت حاصل کرلی ۔ اس کے کوچ میتھانیل ہیلی نے کہا کہ یہ بڑا اقدام ہے ‘ اُس نے اس کیلئے کافی جدوجہد کی ہے اور آخر کار اسے اپنی مہارت کا ثبوت دینے کا حق حاصل ہوگیا ۔ مجھے اپنے شاگرد کی کامیابی پر خوشی ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT