Friday , July 28 2017
Home / شہر کی خبریں / امریکہ میں ہندوستانیوں سے تعصب پر عوام تشویش کا شکار

امریکہ میں ہندوستانیوں سے تعصب پر عوام تشویش کا شکار

اندرون دس یوم چار ہندوستانی حملوں کا شکار، حکومت ہند کی خاموشی لمحہ فکر
حیدرآباد۔5مارچ (سیاست نیوز) امریکہ میں ہندستانیوں کو نسلی تعصب کا شکار بنائے جانے کے واقعات میں ہونے والے اضافہ سے عوام میں تشویش پید ا ہورہی ہے لیکن حکومت کی جانب سے اختیار کردہ رویہ مزید تکلیب کا باعث بنتاجا رہاہے۔ امریکہ میں صدارتی انتخابات کے بعد سے پیدا شدہ صورتحال کا سامنا کررہے افراد میں دن بہ دن اضافہ ہوتا جا رہا ہے لیکن حکومت ہند کی خاموشی ہندستانیوں کی تشویش میں اضافہ کا سبب بنتی جا رہی ہے ۔ گذشتہ 10یوم کے دوران 4ہندستانی نوجوان نسلی تعصب کے حملوں کا شکار ہو چکے ہیں جن میں دو کی موت واقع ہوگئی ہے اور اگر ڈونالڈ ٹرمپ کے اقتدار حاصل کرنے کے بعد کے اعداد و شمار کا جائزہ لیا جائے تو 5نوجوان ان متعصبانہ حملوں کا شکار بنے ہیں جن میں تین کی جان چلی گئی اور دو کا تعلق ریاست تلنگانہ سے ہے۔ مرکزی حکومت بالخصوص وزیر اعظم کی جانب سے اختیار کردہ خاموشی پر عوامی برہمی میں اضافہ ہونے کے خدشات بڑھتے جا رہے ہیں۔ جمعہ کی شب جنوبی کیرولینا میں گجراتی تاجر کی موت کے دوسرے ہی دن امریکہ کے دارالحکومت واشنگٹن میں ہندستانی سکھ پر گولی چلانے کا واقعہ پیش آیا ہے اوراس واقعہ کے متعلق کہا جا رہا ہے کہ اس شخص پر گولی چلانے والے نے بھی گولی چلانے سے قبل کہا تھا کہ ’ میرے ملک سے باہر نکل جاؤ‘ ۔ماہرین خارجہ پالیسی کا کہنا ہے کہ سابق میں جب آسٹریلیاء میں ہندستانی نوجوانوں اور باخصوص طلبہ کو نسلی تعصب کا شکار بنایا جا رہا تھا اس وقت یو پی اے حکومت نے سخت احتجاج درج کرواتے ہوئے سنگین نتائج کا انتباہ دیا تھا اور ملک کے مختلف مقامات پر موجود آسٹریلیائی سفارت خانوں کے روبرو شدید احتجاج منظم کرتے ہوئے ہندستانی طلبہ تنظیموں نے آسٹریلیاء میں رہنے والے ہندستانی شہریوں کے تحفظ کو  یقینی بنانے کا مطالبہ کیا تھا اور اندرون دو ماہ حالات کو معمول پر لانے کے اقدامات پر مجبور کیا گیا تھا۔ امریکہ میں گذشتہ دو ماہ کے دوران ہونے والی تین ہلاکتوں اور 2زخمیوں کے باوجود یہ کہا جا رہا ہے کہ یہ حملے شخصی نوعیت کے ہیں ان حملوں کو روکنے کے اقدامات کئے جائیں گے۔ یہ بات درست ہے کہ یہ حملے حکومت کی سرپرستی میں نہیں کئے جا رہے ہیں لیکن غیر ملکیوں کے متعلق حکومت امریکہ کے موقف کے سبب نسلی تعصب رکھنے والو ںکی حوصلہ افزائی ہو رہی ہے اورامریکی حکومت نے جو پالیسی اختیار کر رکھی ہے اس پر حکومت ہند کی جانب سے دباؤ نہ ڈالے جانے کے سبب سفید فام باشندوں نے ہندستانیوں کو حملو ںکا نشانہ بنانا شروع کردیا ہے جو کہ انتہائی تشویش ناک ہے۔باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق امریکہ میں مقیم ہندستانی باشندوں میں جو برسوں سے امریکہ میں تجارت و ملازمت کر رہے ہیں ان میں بھی خوف پیدا ہونے لگا ہے اور وہ حکومت ہند کے امریکہ کا دورہ کر رہے وفد کے مذاکرات پر گہری نگاہیں مرکوز کئے ہوئے ہیں لیکن اس دورہ کے دوران ہی ایک اور ہندستانی نوجوان کو حملہ کا نشانہ بنائے جانے پر افسوس کا اظہار کیا جا رہا ہے اور اسے حکومت ہند کی سفارتی ناکامی قراردیا جانے لگا ہے۔امریکہ میں ہندستانیوں کو بڑھ رہے خطرات کے متعلق حکومت ہند کی جانب سے سخت گیر موقف اختیار نہ کئے جانے کی صورت میں حالات اور سنگین شکل اختیار کر سکتے ہیں اور حکومت امریکہ کی H1Bویزوں کے تعلق سے اختیار کردہ پالیسی سے نسلی تعصب میں مزید اضافہ کا خدشہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT