Monday , August 21 2017
Home / عرب دنیا / امریکہ کی طرز پر سعودی عرب میں بھی گرین کارڈس کا منصوبہ

امریکہ کی طرز پر سعودی عرب میں بھی گرین کارڈس کا منصوبہ

ریاض ۔ 8 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ میں جس طرح گرین کارڈ ہولڈرس کو اہمیت کا حامل سمجھا جاتا ہے اسی نوعیت پر سعودی عرب نے بھی بیرون ممالک کے ورکرس کیلئے گرین کارڈ متعارف کرنے کا منصوبہ بنایا ہے تاکہ جو لوگ مستقل طور پر وہاں رہائش اختیار کرنا چاہتے ہوں ان کیلئے آسانی ہو۔ سعودی عرب کے اس منصوبہ کا تارکین وطن برادری نے خیرمقدم کیا۔ اس طرح اگر اس منصوبہ پر عمل آوری ہوتو موجودہ اسپانسر شپ نظام کالعدم ہوجائیگا۔ تارکین وطن کو اب پریمیم ؤ انشورنس کے علاوہ زکوٰۃ و ویاٹ ادا کرنے کی ضرورت پیش آئے گی (اگر کوئی ہے تو)۔ اس طرح اب گرین کارڈ ہولڈرس املاک بھی خرید سکتے ہیں اور تجارتی سرگرمیاں شروع کرسکتے ہیں۔ بلومبرگ کو انٹرویو کے دوران نائب ولیعہد پرنس محمد بن سلمان نے گرین کارڈس منصوبہ کے بارے میں بتایا جسکے تحت زائد فیس کی ادائیگی کے بعد زائد ورکرس کی خدمات حاصل کی جاسکتی ہیں۔ دریں اثنا ہندوستان سے تعلق رکھنے والے ایک بزنس ایگزیکیٹیو عامر قیوم نے بتایا کہ مجوزہ منصوبہ ان افراد کیلئے نعمت ثابت ہوگا جو یہاں زائد از 40 سال قیام کئے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایسے افراد کیلئے ایک اور گنجائش پیدا کرنے کی ضرورت ہے کہ اگر مستقل تارکین وطن کی اولادوں میں سے کوئی ایک سعودی عرب کی مسلح افواج میں کسی بھی عہدہ پر رہتے ہوئے ملک کی خدمت کرنا چاہے تو اسے یہ موقع دیا جانا چاہئے۔ اسی طرح او ایف ڈبلیو فورسیس ورلڈ وائڈ کے کنوینر جان مونیٹرینا نے کہا کہ مستحق تارکین وطن کیلئے حکومت کے یہ اقدامات یقیناً قابل تحسین ہیں۔

TOPPOPULARRECENT