Wednesday , September 20 2017
Home / دنیا / امریکہ ۔ ہند و پاک مذاکرات کے جاری رہنے کا خواہاں

امریکہ ۔ ہند و پاک مذاکرات کے جاری رہنے کا خواہاں

ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں وزیرخارجہ ہند سشماسوراج کی شرکت حوصلہ افزاء
واشنگٹن ۔ 10 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے آج ایک بار پھر ہند و پاک کے درمیان بات چیت کے سازگار ماحول کے پیدا ہونے پر اپنی مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یقیناً ہمارے لئے یہ ایک حوصلہ افزاء تبدیلی ہے اور اگر تعطل کا شکار بات چیت کا سلسلہ جاری رہے تو نہ صرف دونوں ممالک بلکہ خطہ کے لئے بھی بیحد کارآمد ثابت ہوگا۔ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ ترجمان جان کربی نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ ہندوپاک کے درمیان بات چیت کا سلسلہ جاری رہے لہٰذا دونوں ممالک کے درمیان حالیہ دنوں میں جو کچھ بھی ہوا وہ حوصلہ افزاء تبدیلی ہے۔ ان کا اشارہ وزیرخارجہ ہند سشماسوراج کی ہارٹ آف ایشیاء میں شرکت کیلئے دورہ پاکستان اور نہ صرف معتمد خارجہ سرتاج عزیز بلکہ وزیراعظم نواز شریف سے بھی ملاقات کی جانب تھا۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک اب یہ فیصلہ خود کرلیں کہ بات چیت کی رفتار کیسی ہونی چاہئے۔ اگر سست رفتاری کا انتخاب کیا گیا تو حالات جوں کے توں رہیں گے اور تیز رفتاری اپنائی گئی تو حالات میں بہتری کی توقعات کی جاسکتی ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں مسٹر کربی نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان اہم مسائل کی یکسوئی کی جانب زائد توجہ دی جانی چاہئے جس کیلئے بات چیت کا سلسلہ جاری رکھا جائے تو بہتر ہوگا۔ جب ان سے پاکستان کے فوجی سربراہ جنرل راحیل شریف کے حالیہ دورہ امریکہ کے بارے میں پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ یہ کوئی نئی بات نہیں ہے کیونکہ دونوں ممالک کے ہم منصب ایک دوسرے سے ملاقات کرتے رہتے ہیں۔ ہمارے فوجی قائدین بھی وقتاً فوقتاً اسلام آباد کا دورہ کرتے رہتے ہیں کیونکہ پاکستان کے ساتھ امریکہ کے دورخی تعلقات انتہائی اہمیت کے حامل ہیں۔ انہوں نے مسکراتے ہوئے کہا کہ ہمارے باہمی تعلقات صرف فوجی قائدین سے ہی نہیں بلکہ ملک کے منتخبہ قائدین سے بھی اہمیت رکھتے ہیں۔ سشماسوراج کا دورہ دونوں ممالک کے قومی سلامتی مشیران کے بنکاک میں ملاقات کے بعد عمل پذیر ہوا ہے جو یقیناً ایک اچھی پیشرفت ہے کیونکہ وہاں دہشت گردی، جموں و کشمیر اور دورخی معاملات موضوع بحث رہے تھے۔

TOPPOPULARRECENT