Saturday , July 22 2017
Home / دنیا / امریکی بمباری کی فوجی مشق کا ردعمل

امریکی بمباری کی فوجی مشق کا ردعمل

سیول ۔ 9جولائی ( سیاست ڈاٹ کام) امریکہ اور جنوبی کوریا نے شمالی کوریا کے خلاف اپنی طاقت کا مظاہرہ کرتے ہوئے فائرنگ کی اور جنگی فوجی مشق کی تھی ۔ شمالی کوریا نے انتباہ دیا کہ اس کا ردعمل شمالی کوریا کی جانب سے ظاہر کیا جائے گا اور اگر کشیدگی میں شدت پیدا ہوجائے تو نیوکلیئر جنگ بھی ہوسکتی ہے ۔ جنوبی کوریا اوراس کا حلیف امریکہ نے شمالی کوریا کے قریب گذشتہ ہفتہ اس کے بین البراعظمی بالسٹک میزائل کے تجربہ کے بعد یہ مشترکہ فوجی مشق کی تھی ۔ کل کی فوجی مشق کا مقصد شمالی کوریا کے میزائل تجربوں پر سخت ردعمل ظاہر کرنا تھا ۔ دو امریکی بمبار دشمن کی میزائل بیٹریوں کے ذریعہ تباہ ہوچکے ہیں جبکہ زمین پر واقع کمانڈ چوکیوں پر جنوبی کوریا نے بالکل درست نشانوں پر حملے کئے تھے ۔ شمالی کوریا کے سرکاری زیر انتظام روزنامہ ’’ روڈان ‘‘ نے امریکہ اور جنوبی کوریا پر الزام عائد کیا کہ وہ اس مشترکہ فوجی مشق کے ذریعہ علاقائی کشیدگی میں اضافہ کررہا ہے ۔ امریکہ اپنی فوجی اشتعال انگیزی کے ذریعہ نیوکلیئر جنگ کا خطرہ پیدا کررہا ہے ۔ شمالی کوریا نے انتباہ دیا کہ کشیدگی میں مزید شدت پیدا ہونے پر یہ تجربے نیوکلیئر جنگ میں بھی تبدیل ہوسکتے ہیں ۔ مبینہ طور پر کل کی فوجی مشق کے دوران طویل فاصلاتی ڈی اور ون ڈی امریکی لانسر بمبار طیارے شمالی اور جنوبی کوریا کی فضائی حدود میں پرواز کرتے دیکھے گئے ۔ ان طیاروں نے مبینہ طور پر 2000 پاؤنڈ وزنی بم تھے ۔ شمالی کوریا نے کہا کہ مشترکہ فوجی مشق انتہائی خطرناک فوجی مشق تھی‘ جس کی وجہ سے علاقائی کشیدگی میں اضافہ ہوتا جارہا ہے اور اندیشہ ہے کہ یہ نیوکلئیر جنگ میں تبدیل ہوجائے گی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT