Tuesday , August 22 2017
Home / دنیا / امریکی جیلوں کے مینو میں پورک روسٹ دوبارہ شامل امریکہ پورک کا دنیا کا سب سے بڑا برآمد کنندہ

امریکی جیلوں کے مینو میں پورک روسٹ دوبارہ شامل امریکہ پورک کا دنیا کا سب سے بڑا برآمد کنندہ

واشنگٹن۔ 17 اکٹوبر۔(سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کی جیلوں میں قیدیوں کے کھانے کی فہرست میں سے پورک (سورکا گوشت) کے خاتمے کے کچھ ہی دنوں بعد اسے دوبارہ مینو میں شامل کر لیا گیا ہے۔ بیورو آف پریزنز کے ذرائع نے بتایا ہے کہ فیصلہ ریپبلکن سینٹر کی طرف سے قیدیوں کی خوراک میں پورک شامل نہ کرنے پر مایوسی کے اظہار کے بعد کیا گیا ہے۔ واشنگٹن پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق سینٹر چارلس ای گریسلے نے گزشتہ روز بیورو آف پریزنز کے ڈائریکٹر چارلس ای سیموئلز جونیئر کو خط لکھا جس میں کہا گیا ہے کہ پورک کی صنعت پر 547,800 ملازمتوں کا انحصار ہے، اس کی بدولت 22.3 بلین ڈالر کی ذاتی آمدنی ہوتی ہے جبکہ جی ڈی پی میں اس کا حصہ 39 بلین ڈالر ہے۔ انہوں نے مزید لکھا کہ امریکہ دنیا میں پورک کا سب سے بڑا برآمد کنندہ ہے اور پورک کی پیداوار میں دنیا بھر میں تیسرے نمبر پر ہے۔ انہوں نے خبردار کیا کہ وفاقی جیلوں میں پورک کے خاتمے سے پورک انڈسٹری میں کام کرنے والے امریکیوں شہریوں پر منفی اثرات مرتب ہوں گے۔ واضح رہے کہ گریلے سینٹ کی جوڈیشری کمیٹی کے چیئرمین ہے جو وفاقی جیلوں کے نظام پر نظر رکھتی ہے۔ پریزن بیورو کے ترجمان ایڈمنڈ روز نے حکومت کی طرف سے اس فیصلے میں فوری تبدیلی کی کوئی وجہ بیان نہیں کی اور ان کا کہنا تھا کہ میں واضح طور پر اس معاملے کے بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتا جس کے بارے میں جواب دینے کیلئے میرے پاس کچھ نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT