Saturday , October 21 2017
Home / ہندوستان / امریکی سفیر رچرڈ ورما کی دفتر خارجہ طلبی

امریکی سفیر رچرڈ ورما کی دفتر خارجہ طلبی

نئی دہلی، 13 فروری (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان نے آج امریکی سفیر رچرڈ ورما کو طلب کیا اور پاکستان کو ایف 16 جنگی طیاروں کی فروخت کیلئے اوباما انتظامیہ کے فیصلہ پر ناراضگی اور مایوسی کا اظہار کیا۔ معتمد خارجہ ایس جئے شنکر نے ورما کو ساؤتھ بلاک (دفتر خارجہ) طلب کیا اور پاکستان کے لئے امریکی فوج کی امداد پر ہندوستان کی تشویش سے واقف کروایا۔ جبکہ نئی دہلی کا یہ ایقان ہے کہا مریکی جنگی طیارے، ہندوستان کے خلاف استعمال کئے جاسکتے ہیں۔ وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہاکہ اوباما انتظامیہ کی جانب سے پاکستان کو ایف 16 ایر کرافٹس کی فروخت کے فیصلہ پر ہندوستان ناخوش ہے اور یہ منطق ناقابل قبول ہے کہ اس طرح کے ہتھیار دہشت گردی کے خلاف مقابلہ میں کارگر ثابت ہوں گے اور اس خصوص میں گزشتہ برسوں کا ریکارڈ خود یہ ظاہر کرتا ہے کہ امریکی اسلحہ کا استعمال کس طرح کیا جارہا ہے۔ اوباما انتظامیہ نے آج یہ اعلان کیا ہے کہ پاکستان کو ایٹمی ہتھیاروں سے لیس 6 ایف 16 جنگی طیارے (تقریباً 700 ملین ڈالر مالیتی) فروخت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ تاہم اس فیصلہ کی تصدیق اندرون 30 یوم امریکی کانگریس میں کرنا ضروری ہے۔ دریں اثناء کانگریس نے اوباما انتظامیہ کی جانب سے پاکستان کو ایف 16 جیٹ طیاروں کی فروخت کے فیصلہ پر وزیراعظم نریندر مودی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ خارجہ پالیسی کے محاذ پر مودی کی واحد کامیابی یہ ہے کہ امریکہ اور روس دونوں بھی پاکستان کے لئے ہتھیاروں کے بڑے سربراہ کنندگان (سپلائیر) بن گئے ہیں۔ پارٹی کے ترجمان منیش تیواری نے کہاکہ ایف 16 طیارے جنگی حربہ کا ہتھیار نہیں ہے بلکہ جنگی حکمت عملی کا ایک حصہ ہے جوکہ علاقہ میں روایتی طاقت کے توازن کو بگاڑ سکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT