Sunday , September 24 2017
Home / Top Stories / امریکی فضائی حملے ،داعش کا سربراہ جنگجوؤں کیساتھ ہلاک

امریکی فضائی حملے ،داعش کا سربراہ جنگجوؤں کیساتھ ہلاک

IDLIB,MAY 27 :- People inspect the damage after an explosion occurred outside a mosque in the rebel-controlled city of Idlib, Syria May 27, 2016. REUTERS-23R

انقرہ۔ 28 مئی ۔(سیاست ڈاٹ کام) عراق اور شام میں امریکی اتحادی فورسز نے داعش کے ٹھکانوں پر بمباری کی جس میں 101 شدت پسند ہلاک ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق امریکی اتحادی فوج نے عراقی شہر فلوجہ میں داعش کے ٹھکانوں پر بمباری کی جس میں داعش کے ایک مقامی رہنما ماہرالبلاوی سمیت 70 شدت پسند ہلاک ہوگئے۔ فلوجہ میں داعش کے ٹھکانوں پر 20 فضائی حملے کیے گئے۔ دریں اثنا امریکی اتحادی فوج نے شامی علاقے رقہ میں بھی داعش کے ٹھکانوں پر 150 حملے کیے جس میں داعش کے 31 شدت پسند ہلاک ہوگئے۔ صوبہ الرقہ کے 5 دیہات کو داعش سے آزاد کرا لیا گیا ہے۔شام میں خانہ جنگی کے نتیجے میں 2لاکھ 80ہزار سے زائد افراد لقمہ اجل بن گئے ہیں۔ ترک حکام نے کہا ہے کہ یہ ہمارے لئے ناقابل قبول ہے کہ امریکی فوجی مقامی کرد جنگجوؤں کے لباس میں جنگ میں شریک ہیں۔ علاوہ ازیں یورپی یونین نے شامی حکومت کے خلاف پابندیوں میں مزید ایک سال کی توسیع کردی ہے۔ کرنل وارن نے کہا کہ فلوجہ میں داعش کے خلاف جاری آپریشن منطقی انجام تک جاری رہے گا۔ اس آپریشن میں دشمن کو بھاگنے کا موقع نہیں دیا جائے گا تاہم انہوں نے تسلیم کیا کہ فلوجہ میں گھیرا تنگ ہونے کے بعد داعشی دہشت گرد اپنی جنگی حکمت عملی تبدیل کرتے ہوئے اپنے ٹھکانے تبدیل کرسکتے ہیں۔ فلوجہ میں داعش کے خلاف عراقی فوج نے تازہ آپریشن گذشتہ ہفتے شروع کیا گیاتھا۔ مغربی بغداد سے 50 کلومیٹر دور واقع اس شہر پر داعش نے جنوری 2014ء کو قبضہ کرلیا تھا۔فلوجہ میں داعشی دہشت گردوں کی تعداد 500 سے 1000 کے درمیان بیان کی جاتی ہے جب کہ شہر میں عام آبادی 50 ہزار نفوس پر مشتمل ہے۔ حالیہ آپریشن کے دوران داعش نے شہریوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرنا شروع کیا ہے اور شہریوں کو محفوظ مقامات کی طرف نقل مکانی کی اجازت نہیں دی جا رہی ہے۔ مقامی حکومتی عہدیداروں کے مطابق کل جمعہ کو سیکڑوں افراد جنگ سے متاثرہ علاقوں سے نکل کر محفوظ مقامات پر منتقل ہوئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT