Thursday , August 24 2017
Home / دنیا / امریکی ڈینٹل کلینک کی مسلم خاتون ملازمہ برطرف

امریکی ڈینٹل کلینک کی مسلم خاتون ملازمہ برطرف

حجاب استعمال کرنے کا نتیجہ ‘ دواخانہ میں غیرجانبدار ماحول برقرار رکھنے پر مالک کا زور
واشنگٹن ۔7اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ میں تعصب کے ایک اور معاملہ میں ایک نوجوان مسلم خاتون کو اس کی ڈینٹل کلینک کی ملازمت سے ہاتھ دھونا پڑا ‘ کیونکہ وہ حجاب پہنتی تھی ۔ اس کے مالک کے اس سے کہا تھا کہ دفتر میں غیرجانبدار ماحول برقرار رکھنے کیلئے حجاب کا استعمال ترک کردیں ۔ نجب خان جسے برطرف کیا گیا ہے ایک ڈینٹل اسسٹنٹ تھی جو فائیراووکس ڈینٹل کیئر ہاسپٹل فیرفیکس کاؤنٹی ورجینیا میں ملازم تھی ۔ اُس نے کہا کہ اس کی نئی ملازمت سے اس لئے بردات کردیا گیا ہے کیونکہ وہ کام کے دوران مسلم حجاب پہنتی تھی۔ ایم بی سی واشنگٹن پر نجب خان نے کہا کہ وہ اُس وقت الجھن زدہ ہوگئی جس دن کہ اُس سے کہا گیاکہ یہ طریقہ تباہ کن ثابت ہوگا ۔ اُس نے اپنے انٹرویو میں اور ملازمت کے پہلے دو دنوں میں حجاب نہیں پہنا تھا ۔ تیسرے دن اُس نے حجاب پہننے کا فیصلہ کیا کیونکہ اُسے احساس ہوگیا تھا کہ اُس کی ملازمت برقرار رہے گی کیونکہ حجاب اسلامی عقیدہ کا ایک حصہ ہے ۔ اُس دن اس کے فیراووکس ڈینٹل کیئر کے مالک ڈاکٹر چک جو نے اس سے حجاب اتاردینے کی
خواہش کی اور کہا کہ وہ دفتر میں غیرجانبدار ماحول برقرار رکھنا چاہتا ہے اور اسلامی سرپوش اُس کے مریضوں کی دل آزاری کی وجہ بن سکتا ہے ۔ اس لئے وہ چاہتا تھا کہ وہ اپنا مذہب دفتر کے باہر ہی رکھے ۔ اس نے کہا کہ وہ اسکارف پہن کر کام جاری نہیں رکھ سکتی ‘جب اُس نے اپنے مذہبی عقیدہ کی قیمت پر سمجھوتہ کرنے سے انکار کردیا تو اُسے ملازمت سے برطرف کردیا گیا ۔اس واقعہ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے امریکی ۔اسلامی روابط کونسل نے کہا کہ کوئی بھی عاجرکسی بھی خاتون یا مرد کے مذہبی عقیدہ یا عمل کی بناء پر اُسے ملازمت سے برطرف نہیں کرسکتا ۔اگر فیرووکس ڈینٹل کیئر برطرف کرنے کی قابل اطمینان وجوہات بیان نہ کرسکے تو اس کے خلاف قانونی کارروائی ممکن ہے ۔

TOPPOPULARRECENT