Friday , August 18 2017
Home / دنیا / امن مذاکرات /13 اپریل تک ملتوی شامی باغیوں کا دولت اسلامیہ کو سربراہی کی شاہراہ پر قبضہ

امن مذاکرات /13 اپریل تک ملتوی شامی باغیوں کا دولت اسلامیہ کو سربراہی کی شاہراہ پر قبضہ

جنیوا ۔ /7 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) اقوام متحدہ کے سفیر اسٹافن ڈی مستورا نے کہا کہ شام امن مذاکرات کے اگلے مرحلے کا آغاز /13 اپریل سے ہوگا ۔ وہ دمشق اور تہران کا دورہ کرکے جنیوا پہونچے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ عبوری سیاسی مدت کیلئے سنجیدگی سے تبادلے خیال کیا گیا ۔ اقوام متحدہ پہلے ہی کہہ چکا ہے کہ 5 سال کی خانہ جنگی ختم کرنے کے مقصد سے /13 اپریل کو مذاکرات کا دوبارہ آغاز ہوگا ۔ دریں اثناء بیروت سے موصولہ اطلاع کے بموجب شام کے باغیوں نے دولت اسلامیہ کے اہم سربراہی کے راستے پر قبضہ کرلیا ہے جو ترکی جاتا تھا ۔ باغیوں کے گروہوں اور اسلام پسندوں نے شمال مشرقی الرائے قصبے پر جو دولت اسلامیہ کے قبضے میں شام اور ترکی کے درمیان واقع تھا قبضہ کرلیا ہے ۔ شامی رسدگاہ برائے انسانی حقوق کے ڈائرکٹر رامی عبدالرحمن نے کہا کہ تاہم جہادی اب بھی مشرق بعیدمیں قصبہ حلوانیہ پر قبضہ برقرار رکھے ہوئے ہے ۔ /27 فبروری کو باغیوں اور شام کی سرکاری افواج کے درمیان جنگ بندی معاہدے کے بعد اس کا نفاذ عمل میں آچکا ہے ۔ تاہم دولت اسلامیہ اور اس سے ملحق النصرۃ محاذ اس کے دائرہ کار میں شامل نہیں ہے ۔ خانہ جنگی کے خاتمہ کیلئے مذاکرات کا جنیوا میں آئندہ ہفتہ دوبارہ احیاء ہوگا ۔ اب تک خانہ جنگی میں دو لاکھ 70 ہزار افراد ہلاک اور لاکھوں بے گھر ہوچکے ہیں ۔ جنگ بندی کے بعد سے پورے شام میں تشدد کے واقعات میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT