Saturday , August 19 2017
Home / سیاسیات / امیت شاہ کی یو ڈی ایف اور یو پی اے حکومتوں پر تنقید

امیت شاہ کی یو ڈی ایف اور یو پی اے حکومتوں پر تنقید

ترواننتھاپورم 5 مئی (سیاست ڈاٹ کام) قومی صدر بی جے پی امیت شاہ نے آج اگسٹا ویسٹ لینڈ ہیلی کاپٹر معاہدہ کے سلسلہ میں کانگریس پر تنقید جاری رکھی اور سابق وزیر دفاع انٹونی سے خواہش کی کہ وہ انکشاف کریں کہ کمپنی کے ساتھ معاہدہ میں تبدیلی کس کی ایماء پر کی گئی تھی۔ کیرالا میں بی جے پی کی تائید میں مسلسل کئی انتخابی جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے اُنھوں نے سولار اسکامس اور باڑ رشوت خوری الزامات کا بھی حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ اب وقت آگیا ہے کہ کانگریس زیرقیادت بدعنوان یو ڈی ایف کو ریاست میں اقتدار سے بیدخل کردیا جائے۔ علاوہ ازیں اُنھوں نے کانگریس کے نظریات پر بھی اعتراض کرتے ہوئے نشاندہی کی کہ مغربی بنگال میں بائیں بازو کے ساتھ اتحاد کیا گیا جبکہ کیرالا میں اسی پارٹی سے مقابلہ کیا جارہا ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ صدر کانگریس سونیا گاندھی کو اِس تضاد کی وضاحت کرنی چاہئے۔ ہیلی کاپٹر سودے کا حوالہ دیتے ہوئے امیت شاہ نے انٹونی سے انکشاف کرنے کی خواہش کی کہ اِن ہیلی کاپٹرس کی آزمائش کا مقام ہندوستان سے اٹلی کیوں منتقل کیا گیا۔ انٹونی پر تنقید کرتے ہوئے جنھوں نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ بی جے پی کا ایک پوشیدہ ایجنڈہ ہے۔ امیت شاہ نے کہاکہ ہم کوئی پوشیدہ ایجنڈہ نہیں رکھتے جو کچھ کرتے ہیں کھلے انداز اور شفافیت کے ساتھ کرتے ہیں۔ منی مالا ضلع کٹائم میں ایک انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے امیت شاہ نے کہاکہ ہیلی کاپٹر سودا سابق کانگریس زیرقیادت یو پی اے حکومت کے داغدار ہونے کا ثبوت ہے۔ آئندہ دنوں میں اِس سودے کے بارے میں مزید انکشافات منظر عام پر آئیں گے۔ صدر بی جے پی نے الزام عائد کیاکہ یو پی اے کے 10 سالہ دور اقتدار میں 12 لاکھ کروڑ روپئے کا کرپشن ہوا۔

TOPPOPULARRECENT