Saturday , August 19 2017
Home / سیاسیات / انتخابی مہم کے آخری لمحوں میں وزیراعظم پر نتیش کی تنقید

انتخابی مہم کے آخری لمحوں میں وزیراعظم پر نتیش کی تنقید

مودی آئندہ 6 دنوں میں تلخ سبق سیکھیں گے : لالو پرساد
دربھنگہ ؍ پٹنہ ۔ 3 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر بہار نتیش کمار نے وزیراعظم نریندر مودی کے انتخابی مہم کے قطعی مرحلہ کے اختتام پر ڈی این کے تبصرہ کا اعادہ کرنے پر عوام سے سوال کیا کہ وہ اس تبصرہ کا جواب عظیم سیکولر اتحاد کی تائید میں 5 نومبر کو ووٹ دیتے ہوئے دیں۔ وزیراعظم نریندر مودی کو گذشتہ 14 ماہ سے بہار یاد نہیں آیا جہاں سے انہیں لوک سبھا انتخابات میں 40 میں 31 نشستیں حاصل ہوئی تھیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ ان کا استقبال کرنے جولائی میں ایرپورٹ گئے تھے۔ بعدازاں وزیراعظم نے مظفرپور میں ان کے ڈی این اے کو مشکوک قرار دیا۔ پٹنہ سے موصولہ اطلاع کے بموجب راشٹریہ جنتادل کے صدر لالو پرساد نے وزیراعظم نریندر مودی کی ان پر تنقید کا شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے جنہوں نے کہا تھا کہ نتیش کمار کو صرف چھ دن برسراقتدار رہنا ہے، کہا کہ نریندر مودی کو جلد ہی تلخ سبق سیکھنا پڑے گا۔ این ڈی اے کی حلیف پارٹیاں خود ان کی اس قسم کی باتوں کا جواب دیں گی۔ لالو پرساد نے کہا کہ عوام وزیراعظم کو چھ دن میں ہی تلخ جواب دیں گے۔ یہاں تک کہ انہیں اپنی چھٹی کا دودھ یاد آجائے گا۔ وہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔ بہار انتخابات کی انتخابی مہم کے آخری دن روانہ ہونے سے قبل انہوں نے پریس کانفرنس سے خطاب کیا تھا۔ بعدازاں بہارنپور میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے لالو پرساد نے دوبارہ کہا کہ وزیراعظم کو بہار انتخابی نتائج کے بعد 8 نومبر کو مستعفی ہونے پر مجبور بھی کیا جاسکتا ہے۔ ایل جے پی کے صدر اور مرکزی وزیر رام ولاس پاسوان نے صدر آر جے ڈی سے خواہش کی کہ وہ نوٹنکی (ڈرامہ) بند کردیں۔ انہوں نے چیف منسٹر نتیش کمار کے برسراقتدار رہنے کے صرف چند دن باقی رہ گئے ہیں۔ 8 نومبر کو انتخابی نتائج کے اعلان کے بعد وہ چیف منسٹر برقرار نہیں رہیں گے۔ ایک اور مرکزی وزیر برائے مملکت رام کرپال یادو نے سابق صدر آر جے ڈی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ لالو اور نتیش دونوں کو آئندہ چھ دن میں چھٹی کا دودھ یاد آجائے گا۔

TOPPOPULARRECENT