Wednesday , August 23 2017
Home / ہندوستان / اندرانی کی حالت بگڑنے میں کوئی مشکوک پہلو نہیں

اندرانی کی حالت بگڑنے میں کوئی مشکوک پہلو نہیں

شینا قتل کیس کی اصل ملزمہ پر غشی طاری ہوتی رہتی ہے، انکوائری کا نتیجہ
ممبئی ، 10 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) اندرانی مکرجی کو شریک دواخانہ کئے جانے کے معاملے نے اب نیا موڑ لے لیا کیونکہ آئی جی (پریزن) کی تحقیقات نے ڈرگ کے حد سے زیادہ استعمال، زہر دیئے جانے یا اقدام خودکشی کے امکان کو مسترد کردیا اور دو رکنی سی بی آئی ٹیم نے آج اُس سے اُس کی بیٹی شینا بورا کے قتل کیس میں لگ بھگ چھ گھنٹے تفتیش بھی کی۔ انسپکٹر جنرل آف پریزنس بپن کمار سنگھ نے کہا کہ ادویات کا کوئی حد سے زیادہ استعمال نہیں ہوا، نہ کوئی زہر دیا گیا۔ اُس کی حالت میں ابتری کی وجہ یہ ہوسکتی ہے کہ اُس نے کچھ وقفہ تک ادویات کا استعمال روک دیا تھا اور وہ نقاہت سے دوچار ہوگئی تھی۔ نیز یہ کہ شینا قتل کیس کی اصل ملزمہ اندرانی پر غشی طاری ہوجانے کی تاریخ دیکھی گئی ہے۔ ’’میں اس نتیجے پر پہنچا ہوں کہ کوئی شرارت، سبوتاج یا سازش کا ثبوت نہیں ملا ہے۔ نیز خودکشی کی کوشش کا بھی کوئی ثبوت نہیں ہے،‘‘ بپن سنگھ نے یہاں بائیکلا جیل میں پریس میٹ کو یہ بات بتائی، اور مزید کہا کہ اندرانی کو اُس کی والدہ کے (گوہاٹی میں ) گزشتہ ماہ انتقال سے کل ہی اُس کے وکیل کی موجودگی میں واقف کرایا گیا۔ آئی جی نے کہا کہ اُن کی انکوائری نے تمام زاویوں کا احاطہ کیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کا حوالہ دیتے ہوئے مہاراشٹرا کے پرنسپال سکریٹری (ہوم) وجئے ستبیر سنگھ نے کہا کہ اندرانی کے قارورہ نمونوں میں پائی گئی کوکین کی مقدار نہایت معمولی ہے۔

TOPPOPULARRECENT