Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / ’’اندرا گاندھی کی طرح، مودی کے بھکت بھی ان کے زوال کا سبب بنیں گے‘‘

’’اندرا گاندھی کی طرح، مودی کے بھکت بھی ان کے زوال کا سبب بنیں گے‘‘

بریہن ممبئی میونسپل کارپوریشن کے اجلاس میں مودی کی تائید میں بی جے پی کارپوریٹرس کی نعرہ بازی پر برہم شیوسینا کا شدید ردعمل
ممبئی ۔ 7 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) شیوسینا نے اپنے زیرکنٹرول بریہن ممبئی کارپوریشن کی ایک تقریب کے دوران نریندر مودی کی تائید میں لگائے گئے نعروں پر چراغ پا ہوکر آج کہا کہ مودی کے بھگت (حامی) بھی بالکل اس طرح ان (مودی) کے زوال کا سبب بنیں گے جس طرح سابق وزیراعظم آنجہانی اندرا گا ندھی اپنے بھکتوں کے سبب زوال پذیر ہوئی تھیں۔ واضح رہیکہ بریہن ممبئی میونسپل کارپوریشن ہیڈکوارٹرز میں چہارشنبہ کو چیکوں کی پیشکشی کی ایک تقریب کے دوران بی جے پی کارپوریٹرس نے مودی کی تائید میں شدید نعرہ بازی کی تھی۔ اس تقریب میں جہاں مہاراشٹرا کے وزیرفینانس سدھیر منگنیئوار بھی موجود تھے۔ اس بلدی ادارہ کو جی ایس ٹی معاوضہ کی پہلی قسط ادا کی گئی تھی۔ اس نعرہ بازی پر برہم شیوسینا کے ترجمان مرہٹی روزنامہ ’’سامنا‘‘ نے اپنے اداریہ میں لکھا ہیکہ ’’جو لو گ آج غیرضروری طور پر مودی کی تائید میں نعرے لگارہے ہیں، وہ دراصل ان کا امیج داغدار کررہے ہیں۔ وہ بھی ایک وقت تھا جب اندراگاندھی کی تائید میںبھی ایسے نعرے لگائے جاتے تھے۔ اندرا گاندھی کے بھکتوں نے ’’اندرا گاندھی ہی ہندوستان ہیں‘‘ جیسے نعرے لگا کر ملک و قوم کی توہین کی تھی اور اس توہین سے ایک ایسی چنگاری بھڑک اٹھی جو ان (اندرا گاندھی) کی شکست کا باعث بنی۔ سینا نے کہا کہ کسی کو مودی پر فخر کرنے اور اس کے بارے میں جنونی بن جانے کے درمیان پائے جانے والے فرق کو سمجھنا چاہئے۔

’’سامنا‘‘ مزید لکھا کہ ’’سچائی یہ ہیکہ اندرا گاندھی نے نہ صرف پاکستان کے خلاف 1971ء کی جنگ میں فتح حاصل کی تھیں بلکہ پاکستان کو تقسیم کرتے ہوئے اس کے گھٹنے ٹکا دی تھیں۔ ہم بی جے پی قیادت سے کہنا چاہتے ہیں کہ اس کے باوجود بھی اندرا گاندھی کی قیادت ان کے حامیوں کی طرف سے دکھائی گئی ضرورت زیادہ اندرا بھکتی کے سبب زوال پذیر ہوئی ہے‘‘۔ واضح رہیکہ وزیرفینانس منگنیئوار جب چیکس پیش کررہے تھے بی جے پی کے چند کارپوریٹرس نے ’’مودی ۔ مودی‘‘ کے نعرے لگائے تھے جس پر حکمران شیوسینا کارپوریٹرس بھی جوابی نعرہ بازی کیلئے مجبور ہوگئے۔ دونوں طرف سے نعرہ بازی کے درمیان ہونے والی ہنگامہ آرائی میں شیوسینا کے چند کارکنوں نے بی جے پی کے ایک کارپوریٹر کی مبینہ طور پر پٹائی کی تھی۔ سامنا نے مزید لکھا کہ ایک ایسا بھی وقت تھا جب ساری دنیا مودی کے خلاف تھی۔ شیوسینا ان (مودی) کے ساتھ کھڑی رہی لیکن ج و لوگ آج مودی کے حق میں نعرے لگا رہے ہیں وہ اس وقت ڈر کے مارے خاموش رہنے کو ترجیح دے رہے تھے۔ ہماری دوست (بی جے پی) کو چاہئے کہ وہ خود اپنے بھکتوں سے خبردار و چوکس رہے جو لوگ آج مودی کی تائید میں نعرے لگارہے ہیں کل وہی لوگ ان (مودی) کے زوال کا سبب بنیں گے۔

TOPPOPULARRECENT