Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / اندرون 2 سال بائیں بازو کے تشدد کا خاتمہ

اندرون 2 سال بائیں بازو کے تشدد کا خاتمہ

تلنگانہ میں تخریب کار گروپس میں بھرتی کی اطلاع نہیں ۔ مرکزی وزیر
حیدرآباد ۔ 25 ۔ اگست : ( ایجنسیز ) : مرکزی منسٹر آف اسٹیٹ داخلہ میری بھائی پارتی بھائی چودھری نے کہا کہ مرکزی حکومت نے بائیں بازو کی تخریب کاری سے نمٹنے ایک جامع منصوبہ تیار کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم آئندہ دو سال میں ملک سے بائیں بازو کی تخریب کاری کو ختم کردینے کا منصوبہ بنا رہے ہیں ۔ کل میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مرکز نے جوایکشن پلان بنایا ہے ۔ اس سے نکسلائٹ مسئلہ کو ختم کرنے میں مدد ملے گی ۔ انہوں نے بتایا کہ نکسلائٹ تشدد میں پہلے ہی 30 فیصد کمی آگئی ہے ۔ آئندہ دو برسوں میں یہ تشدد مکمل ختم ہوجائے گا ۔ یہ واضح کرتے ہوئے کہ بائیں بازو کے تشدد سے ملک کی 10 ریاستوں کے 108 اضلاع متاثر ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ مرکز نے عوام کو اس تشدد سے دور رہنے کی ترغیب دینے بڑے پیمانے پر مہم شروع کر رکھی ہے ۔ ان اضلاع میں مرکزی حکومت کی جانب سے نہ صرف مخالف نکسلائٹ مہم شروع کی گئی ہے بلکہ بڑے پیمانے پر ترقیاتی کام بھی کئے جارہے ہیں ۔ مرکزی منسٹر آف اسٹیٹ داخلہ نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ مرکز کو ایسی کوئی اطلاع نہیں ہے کہ تخریب کار اور عسکری گروپس تلنگانہ ریاست میں نوجوانوں کو بھرتی کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت ملک کی مسلح افواج کو ہر ممکنہ مدد فراہم کررہی ہے ۔ انہیں بنا پائلٹ کے طیارے ، ہتھیار اور اسلحہ وغیرہ بھی فراہم کئے جارہے ہیں ۔ اس کے علاوہ بائیں بازو کے تشدد سے متاثرہ علاقوں میں 400 عصری پولیس اسٹیشن بھی قائم کئے گئے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT