Thursday , September 21 2017
Home / جرائم و حادثات / اندور میں اے آئی ایس ایف کی امن ریالی پر حملہ

اندور میں اے آئی ایس ایف کی امن ریالی پر حملہ

بی جے پی کی الٹی گنتی شروع ، سید ولی اللہ کا شدید ردعمل
حیدرآباد /9 اگست ( سیاست نیوز ) اے آئی ایس ایف کے لانگ مارچ میں روکاوٹ پیدا کرتے ہوئے زعفراتی تنظیموں کے کارکنوں نے آج ریالی کو حملہ کا نشانہ بنایا ۔ ملک بچاؤ ملک بناؤ نعرہ سے جاری بائیں بازو کی طلبہ تنظیم کا امن مارچ بی جے پی کیلئے پریشانی کا سبب بنتا جارہا ہے ۔ ریالی جیسے ہی گجرات سے اندور پہونچی کمیونسٹ جماعت کے خلاف زبردست نعرہ بازی کرتے ہوئے امن قافلہ پر حملہ کیا گیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ بجرنگ دل ، آر ایس ایس اور بی جے پی کارکنوں کی جانب سے کئے گئے اس حملہ میں امن قافلہ کی گاڑیوں کو شدید نقصان پہونچا اور کئی گاڑیوں کو نظر آتش کردیا گیا ۔ تاہم پولیس زعفراتی تنظیموں کے کارکنوں کی اس حرکت اور کمیونسٹوں کے قافلہ پر حملہ کے درمیان خاموش تماشئی بنی رہی ۔ اس واقعہ پر اپنا شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے قومی صدر اے آئی ایس نائب سید ولی اللہ قادری نے کہا کہ اب ملک میں بی جے پی کی الٹی گنتی کے دن شروع ہوگئے ہیں ۔ انہوں نے بی جے پی قیادت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور انہیں للکارتے ہوئے کہا کہ کمیونسٹ جماعتیں ایسے بزدلانہ حملوں سے خوف زدہ نہیں ہوں گی ۔ جن جماعتوں نے ملک سے انگریزوں کو مار بھگایا ہے اب وہ انگریزوں کے دلالوں کا بھی منہ کالا کریں گے ۔ انہوں نے امن مارچ پر حملہ کیلئے وزیر اعظم کو ذمہ دار ٹہرایا اور کہا کہ ملک کے دستور ی نظام اور جمہوری اصولوں کی سر عام خلاف ورزی پر وزیر اعظم کو جواب دینا ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ گجرات سے احمد پٹیل کی کامیابی سے بی جے پی خوف کا شکار ہوگئی ہے اور اب وہ ایسی اوجھی حرکتوں پر اتر آئی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ امن مارچ ایسے حملوں سے روکے گا نہیں بلکہ مزید حوصلے کے ساتھ آگے بڑھے گا اور مدھیہ پردیش میں پورے جوش و خروش کے ساتھ جاری رہے گا ۔ انہوں نے لانگ مارچ پر حملہ کو بزدلانہ حرکت سے تعبیر کیا اور کہا کہ کمیونسٹوں کے خلاف بی جے پی ہر محاذ میں ناکام ہوگئی چونکہ کمیونسٹ ملک کیلئے جینے والے ہیں جبکہ بی جے پی ذاتی مفاد کیلئے ملک اور مذہب کا استعمال کرتی ہے ۔ سید ولی اللہ قادری قومی صدر آل انڈیا اسٹوڈنٹس فیڈریشن نے کہا کہ بی جے پی کو اب اس بات کا یقین ہوگیا ہے کہ وہ اس ملک کے جمہوری ڈھانچہ کو ذات پات کے نام پر نہیں ہلاسکتی اور نہ ہی کمیونسٹ جماعتوں کا وہ مقابلہ کرسکتی ہے ۔ لہذا اب ایسی حرکتوں پر اتر آئی ہے ۔ صدر طلبہ تنظیم نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ لاٹھی چارج پتھراؤ حملہ اور آتش زنی کے واقعات میں ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی کریں ۔ حصول انصاف کو یقینی بنائیں ۔ اس لانگ مارچ ریالی میں کنیا کمار ، بسواجیت کمار ، اے راجہ اور دیگر سرکردہ قائدین موجود تھے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT