Tuesday , September 26 2017
Home / دنیا / انسداد دہشت گردی کمیشن قائم کرنے ٹرمپ کی تجویز

انسداد دہشت گردی کمیشن قائم کرنے ٹرمپ کی تجویز

مسلمانوں پر امتناع اور ایمگریشن پالیسی کا جائزہ لیا جائے گا
واشنگٹن 11 مئی (سیاست ڈاٹ کام) ریپبلکن پارٹی کے امکانی امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ نے کہاکہ اُن کی امیگریشن پالیسیوں اور امریکہ کے مکمل طور پر محفوظ ہونے کی یقین دہانی تک بیرونی مسلمانوں کے داخلہ پر امتناع کی متنازعہ تجویز کا جائزہ لینے کے لئے وہ انسداد دہشت گردی کمیشن قائم کرسکتے ہیں۔ ٹرمپ نے فاکس نیوز کو بتایا کہ وہ کمیشن کے قیام کے بارے میں غور کررہے ہیں۔ امکان ہے کہ ریوڈی گیولیانی اس کے سربراہ ہوں گے اور وہ اِس مسئلہ کا بالکل سنجیدگی سے جائزہ لیں گے۔ اُنھوں نے کہاکہ یہ ایک عالمگیر مسئلہ ہے اور ہمیں چوکس اور چوکنا رہنا ہوگا۔ ریوڈی گیولیانی 1994 ء سے 2001 ء تک نیویارک کے میئر رہ چکے ہیں اور اُنھوں نے ٹرمپ کی مسلمانوں پر امتناع کی تجویز کو غیر دستوری قرار دیا تھا۔ اُنھوں نے کہا تھا کہ مسلمانوں پر امتناع دستور کی خلاف ورزی ہوگی اور مذہبی بنیاد پر یہ فیصلہ نہیں کیا جاسکتا کہ امریکہ میں داخلہ کی اجازت دی جائے یا نہیں۔ 69 سالہ رئیل اسٹیٹ شعبہ سے وابستہ ارب پتی ڈونالڈ ٹرمپ نے کہاکہ یہ کمیشن مسلمانوں پر امتناع کی اُن کی تجویز کا جائزہ لے گا۔ اِس کے علاوہ امریکہ میں غیر قانونی طور پر داخل ہونے والے کسی بھی شخص کو نکال باہر کرنے اور شامی پناہ گزینوں کے داخلہ کے بارے میں بھی جائزہ لے گا۔

TOPPOPULARRECENT