Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / انسداد سڑک حادثات پر حکومت کے اقدامات

انسداد سڑک حادثات پر حکومت کے اقدامات

سپریم کورٹ کی ہدایت پر عمل ، وزیر داخلہ کا ایوان اسمبلی میں بیان
حیدرآباد۔21ڈسمبر (سیاست نیوز) ریاست میں سڑک حادثوں کو روکنے کے لئے حکومت کی جانب سے متعدد اقدامات کئے جارہے ہیں اور سپریم کورٹ کے احکام کے مطابق شاہراہوں پر موجود شراب کی دکانات کو نہ صرف بند کروایا جا رہا ہے ۔ریاستی وزیر داخلہ مسٹر این نرسمہا ریڈی نے وقفہ سولات کے دوران اسمبلی میں یہ بات بتائی۔ انہوں نے بتایا کہ ریاست میں سڑک حادثوںکو روکنے کیلئے اب تک جو اقدامات کئے گئے ہیں ان میں شاہراہوں پر ٹریفک پولیس نظام کو مستحکم کرنے اور نئے پولیس اسٹیشن قام کرنے کا منصوبہ شامل ہے۔ مسٹر این نرسمہا ریڈی ارکان اسمبلی مسٹر ڈی ونئے بھاسکر‘ مسٹر چنتا پربھاکر ‘ مسٹر کے پربھاکر ریڈی اور ایم سدھیر ریڈی کی جانب سے اٹھائے گئے سوالات کے جواب دیتے ہوئے یہ بات کہی۔ انہوں نے بتایا کہ شاہراہوں پر سی سی ٹی وی کیمروں کے ذریعہ نظر رکھنے کے علاوہ پولیس پٹرولنگ میں شدت پیدا کی گئی ہے تاکہ حادثات کی روک تھام کو ممکن بنایا جا سکے۔ انہوں نے بتایا کہ ریاست بھر میں شاہراہوں کے علاوہ شہری علاقوں میں سیل فون ڈرائیونگ اور نشہ کی حالت میں گاڑی چلانے والوں کے خلاف کاروائی کی جارہی ہے کیونکہ بیشتر حادثات ان دونوں وجوہات کی بناء پر ہی پیش آرہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ شاہراہوں پر حادثات کی روک تھام کیلئے ڈپارٹمنٹ آف ٹریفک اینڈ روڈ سیفٹی کی جانب سے 50نئے پولیس اسٹیشن قائم کئے جانے کا منصوبہ ہے۔ وزیر داخلہ نے بتایاکہ قومی شاہراہوں پر ہر 50کیلو میٹر پر ایک ٹریفک پولیس اسٹیشن کے قیام کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔ارکان اسمبلی نے شہر میں پیش آنے والے سڑک حادثات کی روک تھام میں حکومت پر ناکامی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی جانب سے شہری سڑکوں پر حادثات کی روک تھام کیلئے اقدامات نہیں کئے جارہے ہیں جس پر ریاستی وزیر داخلہ نے بتایا کہ شہر میں بھی سگنل توڑنے‘ نشہ کی حالت میں گاڑی چلانے کے علاوہ سیل فون ڈرائیونگ کے خلاف مقدمات درج کئے جا رہے ہیں اور متعدد مرتبہ اس طرح کی خلاف ورزیوں کے مرتکب پائے جانے والوں کے خلاف سخت کاروائی بھی کی جا رہی ہے اور ان کے لائسنس منسوخ کرنے کے متعلق بھی غور کیا جا رہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT