Wednesday , September 20 2017
Home / دنیا / انڈونیشیاء کے عالم دین رہائی کے بعد دوبارہ گرفتار

انڈونیشیاء کے عالم دین رہائی کے بعد دوبارہ گرفتار

جکارتہ ۔ 18 اگست (سیاست ڈاٹ کام) ایک سخت گیر اسلامی عالم دین جنہیں انڈونیشیاء کی یوم آزادی کے موقع پر جیل سے قبل از وقت رہا کردیا گیا تھا تاہم ان کے متعدد دہشت گرد حملوں میں مبینہ طور پر ملوث پائے جانے پر انہیں دوبارہ گرفتار کرلیاگیا۔ امان عبدالرحمن جنہوں نے جیل میں رہتے ہوئے دولت اسلامیہ گروپ سے ملحقہ ایک دہشت گرد گروپ کی قیادت کی تھی اورجو ان دیگر 90,000 قیدیوں میں شامل تھے، جن کی قید کی میعاد میں یوم آزادی کے موقع پر تخفیف کی گئی تھی۔ دوبارہ گرفتاری کے بعد عبدالرحمن کو نوساکمبنگن جیل سے جکارتہ کے قریب ایک پولیس کے حراستی مرکز کو روانہ کیا گیا ہے۔ عبدالرحمن سے ان کے جنوری 2016ء وسطی جکارتہ میں ہوئے خودکش حملوں میں مبینہ طور پر ملوث ہونے کے بارے میں پوچھ گچھ کی جائے گی۔ اس خودکش حملہ میں چار شہری اور چار حملہ آور ہلاک ہوئے تھے۔ عبدالرحمن کو جہادی تربیتی کیمپ کے قیام میں تعاون کرنے کا قصوروار پایا گیا تھا اوروہ نو سال کی سزائے قید بھگت رہے تھے۔

TOPPOPULARRECENT