Friday , September 22 2017
Home / کھیل کی خبریں / انڈیا کیلئے ریو میں لندن کو پیچھے چھوڑنے کا چیلنج

انڈیا کیلئے ریو میں لندن کو پیچھے چھوڑنے کا چیلنج

ریو ڈی جنیرو ، 4 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام)125 کروڑ شائقین کی امیدوں کے ساتھ ہندستان کا اب تک سب سے بڑا دستہ جمعہ کو شروع ہو رہے کھیلوں کے میگا ایونٹ ریو اولمپکس میں 2012ء لندن گیمز کی ریکارڈ ساز کامیابی کو پیچھے چھوڑ کر اور ایک نئی تاریخ بنانے کے مقصد کے ساتھ شروعات کرے گا۔ ہندوستان کو ریو اولمپکس شروع ہونے سے کچھ دن پہلے ڈوپنگ تنازعہ سے گزرنا پڑا لیکن پہلوان نرسنگ یادو اس تنازعہ سے فاتح کی طرح باہر نکل آئے جبکہ شاٹ پٹر اندرجیت سنگھ اور 200 میٹر کے رنر دھر م بیر سنگھ ڈوپنگ میں پھنس گئے ۔ان تنازعات کے باوجود 118 رکنی ہندستانی اسکواڈ سے ریکارڈ ساز کارکردگی کی امید کی جا رہی ہے۔ انڈیا نے لندن اولمپکس میں دو سلور اور چار برونز سمیت چھ تمغے جیتے تھے لیکن یہ تعداد اس بار دگنا ہونے کی امید کی جارہی ہے ۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے ریو جانے والے کھلاڑیوں سے ذاتی طور پر ملاقات کر کے اچھی پہل کی تھی اور ان کیلئے اپنی نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

٭  نشانے بازی کے مقابلے 6 اگست کو شروع ہوں گے اور اگر ہندوستانی شوٹرز ملک کو اچھا آغاز دے پائیں تو کامیابی کی تاریخ بن سکتی ہے۔گولڈن بوائے ابھینو بندرا پر سب کی نظریں رہیں گی۔ بندرا افتتاحی تقریب میں ہندستان کے پرچم بردار رہیں گے ۔بندرا نے 2008ء اولمپکس میں طلائی تمغہ جیت کر تاریخ بنائی تھی ۔ لیکن 2012ء لندن میں وہ اپنی اس کامیابی کو دہرا نہیں پائے ۔
٭  گگن نارنگ 2012 ء کے لندن گیمز میں برونز جیتنے میں کامیاب رہے تھے ۔اس بار ملک کو امید ہے کہ گگن اسے سونے میں تبدیل کرنے میں کامیاب ہوں گے ۔نارنگ تین ایونٹس 50 میٹر ایئر رائفل، 50 میٹر رائفل پرون اور 50 میٹر رائفل تھری پوزیشن میں اتریں گے۔
٭  ڈوپنگ تنازعہ سے فاتح کی طرح نکلے نرسنگ یادو پر تمغہ جیتنے کا خاصا دباؤ رہے گا۔ نرسنگ کو 74 کلوگرام زمرہ میں گزشتہ سلور میڈلسٹ سشیل کمار سے عدالتی جنگ اور پھر ڈوپنگ کی لڑائی جیت کر ریو میں اترنے کا حق مل گیا ہے ۔ نرسنگ کیلئے یہ سنہری موقع ہے کہ وہ خود کو اولمپکس کے میدان میں ثابت کر یں اور تمغے جیتیں ۔ نرسنگ کے علاوہ لندن اولمپکس کے برونز میڈلسٹ ریسلر یوگیشور دت 65 کلوگرام زمرہ میں تمغہ کے دعویدار رہیں گے۔ کشتی کے مقابلے 15 اگسٹ کو شروع ہوں گے ۔
٭  بیڈمنٹن سوپر اسٹار سائنا نہوال سے ایک بار پھر اولمپکس میں تمغہ جیتنے کی امید لگائی جا رہی ہے ۔لندن اولمپکس میں برونز جیت چکی سائنا سے براہ راست گولڈ کی امید لگائی جا رہی ہے ۔ سائنا دنیا کی تمام بڑی کھلاڑیوں کو شکست دے چکی ہیں اور اس سال جس طرح بیڈمنٹن میں چین کا دبدبہ ٹوٹا ، اسے دیکھتے ہوئے سائنا پھر پوڈیم پر پہنچ جائے تو کسی کو حیرانی نہیں ہوگی۔ سائنا کے بعد پی وی سندھو بھی دعویدار ہیں لیکن انہیں اپنی کارکردگی میں تسلسل رکھنا ہوگا۔ ویمنس ڈبلز میں جوالہ گٹا اور اشونی پونپا پر نظریں ہوں گی۔بیڈمنٹن مقابلے 11 اگسٹ کو شروع ہوں گے ۔

TOPPOPULARRECENT