Saturday , August 19 2017
Home / Top Stories / انڈین مجاہدین کا مبینہ فینانسر این آئی اے کی تحویل میں

انڈین مجاہدین کا مبینہ فینانسر این آئی اے کی تحویل میں

نئی دہلی۔ /20 مئی (سیاست ڈاٹ کام) ایک خصوصی عدالت نے آج انڈین مجاہدین کے کلیدی کارکن عبدالواحد سدی باپا کو 7 دن کیلئے این آئی اے کی تحویل میں دے دیا جس نے کہا تھا کہ دہشت گرد تنظیم کو مالیہ کی منتقلی کے سلسلے میں اس سے تفتیش ضروری ہے ۔ 32 سالہ سدی باپا ساکن بھٹکل کرناٹک کو خصوصی این آئی اے جج راکیش پنڈت کے اجلاس پر پیش کیا گیا تھا اور این آئی اے نے کہا تھا کہ اسے 15 دن کیلئے این آئی اے کی تحویل میں دیا جائے تاکہ انڈین مجاہدین کو پاکستان سے براہ دوبئی مالیہ کی فراہمی کے بارے میں تفتیش کی جاسکے ۔ خصوصی جج راکیش پانڈے نے سات دن کی تحویل منظور کی ۔ ایڈوکیٹ ایم ایس خان نے سدی باپا کی پیروی کرتے ہوئے کہا کہ ملزم سے اس پر عائد الزامات کے بارے میں پہلے ہی تفتیش مکمل ہوچکی ہے اور وہ نہ تو معلنہ مجرموں یا مطلوب افراد کی فہرست میں شامل ہے اس لئے اس کو این آئی اے کی تحویل میں نہیں دیا جانا چاہئیے۔ سدی باپایسین بھٹکل کے معاون بانی کی حیثیت رکھتا ہے اسے دوبئی سے ہندوستان پہونچتے ہیں گرفتار کرلیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT