Tuesday , August 22 2017
Home / ہندوستان / انکاؤنٹر میں نکسلائیٹ کمانڈر ہلاک

انکاؤنٹر میں نکسلائیٹ کمانڈر ہلاک

چھتیس گڑھ میں سیکورٹی فورس کی کارروائی
رائے پور۔/16اگسٹ، ( سیاست ڈاٹ کام ) ایک خطرناک نکسلائیٹ جو کہ چھتیس گڑھ کے ضلع بستر میں لوک سبھا انتخابات 2014 کے دوران ایک ایمبولنس کو دھماکہ سے اڑادینے کے واقعہ میں سی آر پی ایف کے 5 اہلکاروں اور 2 شہریوں کی ہلاکت کا ذمہ دار تھا سیکوریٹی فورسیس کے ساتھ آج گھمسان لڑائی میں مارا گیا۔ انسپکٹر جنرل پولیس بستر رینج مسٹر ایس کلوری نے بتایا کہ دربھا پولیس اسٹیشن کے تحت چینڈو میٹا کے گھنے جنگل میں سیکوریٹی فورس کی مشترکہ ٹیم نے ماویسٹ جن ملیشا کمانڈر ارجن کو فائرنگ میں ہلاک کردیا۔ انہوں نے بتایا کہ اڈیشہ کی سرحد سے متصل علاقہ چینڈو میٹا جو کہ نکسلائیٹس کا گڑھ تصور کیا جاتا ہے ڈسٹرکٹ ریزرو گروپ، اسپیشل ٹاسک فورس اور ڈسٹرکٹ فورس 10اگسٹ سے تلاشی مہم پر تھی۔ سیکوریٹی فورس نے آج صبح جنگل میں واقع ایک پہاڑی علاقہ کا محاصرہ کرلیا تو ماویسٹوں کے ایک گروپ نے اچانک فائرنگ شروع کردی جس کے بعد ایک گھنٹہ تک فائرنگ کا تبادلہ عمل میں آیا۔ دریں اثناء بعض نکسلائیٹس فرار ہوگئے۔ انکاؤنٹر کے مقام کی تلاشی کے دوران ایک ماویسٹ کی نعش، آتشی اسلحہ اور دیگر اشیاء برآمد ہوئیں۔ مقامی دیہاتیوں کی اعانت سے مہلوک کی شناخت ارجن کمانڈر جن ملیشیا کی حیثیت سے کی گئی۔ وہ علاقہ دربھا میں 2اپریل 2014 کو 108 سنجیونی ایکسپریس ( ایمبولنس سرویس ) کو دھماکہ سے اڑادینے کے واقعہ کا اصل ملزم تھا جس میں سی آر پی ایف کے 5جوان اور ایمبولنس کے دو ملازمین ہلاک ہوگئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT