Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / انہدامی کارروائی میں ایک شیرخوار لڑکی کی موت پر تنازعہ

انہدامی کارروائی میں ایک شیرخوار لڑکی کی موت پر تنازعہ

چیف منسٹر دہلی کی وزیر ریلوے سریش پربھو سے ملاقات
نئی دہلی ۔ 14 ۔ دسمبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : انہدامی کارروائی کے دوران ایک 6 ماہ کے شیرخوار بچہ کی موت پر برہم چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال نے آج بتایا کہ وہ اس مسئلہ کو وزیر ریلوے سریش پربھو سے رجوع کریں گے ۔ چیف منسٹر نے اپنے ٹوئٹر پر بتایا کہ وزیر ریلوے سے ملاقات کے لیے وقت طلب کیا گیا ہے ۔ واضح رہے کہ شکور بستی ریلوے کالونی کے قریب جھگی جھونپڑیوں کو ریلوے حکام نے منہدم کردیا تھا جس کے دوران ایک شیرخوار لڑکی کی موت واقع ہوئگی ۔ اس واقعہ پر کجریوال حکومت اور مرکز کے درمیان ایک تنازعہ پیدا ہوگیا ۔ عام آدمی پارٹی حکومت نے انہدامی کارروائی اور شیرخوار لڑکی کے موت کی مجسٹرئیل تحقیقات کا حکم دیدیا ہے تاہم ریلوے حکام نے کہا کہ اس واقعہ کا ناجائز قابضین کو ہٹادینے سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ بادی النظر میں یہ پتہ چلا ہے کہ شیرخوار لڑکی پر ایک کپڑوں کا بنڈل گرنے کے باعث دم گھٹنے سے موت ہوئی ہے جب والدین اپنی جھونپڑی کا سامان خالی کرنے میں مصروف تھے اور اس خصوص میں کوئی کیس درج نہیں کیا گیا ہے ۔ کجریوال نے کل اپنی قیام گاہ پر ریلوے عہدیداروں سے ملاقات کی تھی لیکن ان کے رویہ سے وہ خوش نہیں تھے ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ چیف منسٹر نے ریلوے عہدیداروں سے دریافت کیا کہ انہدامی کارروائی کیوں شروع کی گئی آیا کوئی ہنگامی پراجکٹ شروع کیا جانا تھا ۔ جس پر وہ طمانیت بخش جواب دینے سے قاصر تھے ۔ چیف منسٹر نے بتایا کہ وہ بہت جلد وزیر ریلوے سے ملاقات کر کے اس مسئلہ کا حل تلاش کریں گے ۔

TOPPOPULARRECENT