Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / انیس الغرباء میں مالیاتی بے قاعدگیاں ، اکاونٹس کی جانچ کی ہدایت

انیس الغرباء میں مالیاتی بے قاعدگیاں ، اکاونٹس کی جانچ کی ہدایت

دو کروڑ مالیتی فکسڈ ڈپازٹ کے اصل دستاویزات غائب ، الحاج محمد سلیم کا جائزہ اجلاس
حیدرآباد۔17 اگست (سیاست نیوز) وقف بورڈ کے تحت چلنے والے ادارے انیس الغربا میں مالیاتی بے قاعدگیوں کا پتہ چلنے پر صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے اکائونٹس کی جانچ اور متعلقہ عہدیداروں کی تبدیلی کی ہدایت دی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ صدرنشین وقف بورڈ نے انیس الغربا کے انتظامات کا جائزہ لینے کے لیے جب عہدیداروں کے ساتھ اجلاس منعقد کیا تو کئی مالیاتی بے قاعدگیاں منظر عام پر آئیں۔ انیس الغربا کے 2 کروڑ روپئے مالیتی فکسڈ ڈپازٹ جن کی مدت ایک سال قبل ہوچکی ہے، اس کا اوریجنل ریکارڈ وقف بورڈ موجود نہیں ہے۔ متعلقہ عہدیدار اور انیس الغربا کا عملہ دستاویزات سے لاعلمی کا اظہار کررہا ہے۔ فکسڈ ڈپازٹ کی یہ رقم اگرچہ بینکوں میں محفوظ ہے لیکن اوریجنل ریکارڈ کی عدم دستیابی سے بورڈ کو رقم حاصل کرنے میں دشواریاں ہوسکتی ہیں۔ اس کے علاوہ انیس الغربا کو روزانہ آنے والے عطیات اور خرچ کا کوئی حساب کتاب نہیں ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ اہل خیر افراد کی جانب سے دیئے جانے والے عطیات اور سامان کا ملازمین کی مرضی سے استعمال ہورہا ہے۔ انیس الغربا کا غلّا پر ہوچکا ہے لیکن اسے طویل عرصے سے کھولا نہیں گیا جس کے باعث عوام کو غلے میں عطیہ کی رقم جمع کرنے میں دشواری ہورہی ہے۔ صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے عطیات کی وصولی اور ان کے خرچ کے بارے میں حساب پیش کرنے کی ہدایت دی۔ انہوں نے کہا کہ چیف ایگزیکٹیو آفیسر منان فاروقی کی نگرانی میں اس معاملہ کی جانچ کی جائے گی۔ انیس الغربا کے ملازمین اور انچارج عہدیدار حقیقی صورتحال سے وقف بورڈ کو لاعلم رکھے ہوئے ہیں۔ لہٰذا ایگزیکٹیو آفیسر کی خدمات سے دستبرداری کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ محمد سلیم نے کہا کہ گزشتہ چند برسوں میں لاکھوں روپئے کی دھاندلیاں ہوئی ہیں۔ انیس الغربا کے تحت بازار گھاٹ اور دیگر علاقوں میں بعض جائیدادیں ہیں جن کا کرایہ وقف بورڈ میں جمع نہیں ہورہا ہے۔ صدرنشین وقف بورڈ نے مذکورہ دھاندلیوں پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے مکمل جانچ اور خاطیوں کے خلاف کارروائی کی ہدایت دی۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ ایک سال سے انیس الغربا کے امور کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ اس ادارے کی کارکردگی بہتر بنانے اسٹاف کو مکمل طور پر تبدیل کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ یتیم و یسیر بچوں سے حق تلفی کرنے والوں کو بخشا نہیں جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT