Saturday , October 21 2017
Home / دنیا / اوباما انتظامیہ کا معروف آئی ٹی کمپنیوں سے تعاون مطلوب

اوباما انتظامیہ کا معروف آئی ٹی کمپنیوں سے تعاون مطلوب

واشنگٹن ۔ 8 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) اب جبکہ دولت اسلامیہ اور القاعدہ جیسی دہشت گرد تنظیمیں بھی منافرت کا پیغام عام کرنے اور اپنی صفوں میں جہادیوں کو شامل کرنے سوشیل میڈیا کا استعمال کررہی ہیں لہٰذا اس نئی پیدا شدہ صورتحال میں اعلیٰ سطحی امریکی عہدیدار سلیکان ویلی کی آئی ٹی کمپنیوں کے ایگزیکیٹیوز سے ملاقات کرنے والے ہیں تاکہ کوئی ایسا منصوبہ تیار کیا جاسکے جس سے ان دہشت گرد تنظیموں کیلئے اس نئی ٹیکنالوجی کا استعمال انتہائی مشکل ہوجائے۔ اوباما انتظامیہ نے اس طرح اب آئی ٹی کمپنیوں سے تعاون طلب کیا ہے تاکہ ٹیکنالوجی کے ذریعہ منافرت پر مشتمل پیغامات اور جہادیوں کی بھرتی کے طریقہ کار کو مسدود کردیا جائے تاکہ سانپ بھی مرجائے اور لاٹھی بھی نہ ٹوٹے یعنی آزادی اظہارخیال کی خلاف ورزی بھی نہ ہو۔ سلیکان ویلی میں اس منفرد ملاقات کی قیادت اٹارنی جنرل لوریٹا لائنچ، ایف بی آئی ڈائرکٹر جیمس کومی، وائیٹ ہاؤس چیف آف اسٹاف ڈینس میک ڈونوف اور نیشنل انٹلیجنس کے ڈائرکٹر جیمس کلاپر کرینگے، جن میں سلیکان ویلی کی اہم آئی ٹی کمپنیوں کو مدعو کیا جاچکا ہے جن میں گوگل، فیس بک، ٹوئیٹر، مائیکرو سافٹ اور ایپل شامل ہیں۔ ایپل کے سی ای او ٹیم کک میںاجلاس میں شرکت کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT