Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / اونا میں آر ایس ایس کا ’’سنت سمیلن‘‘ گاؤرکشکوں کی مذمت

اونا میں آر ایس ایس کا ’’سنت سمیلن‘‘ گاؤرکشکوں کی مذمت

احمدآباد ۔ 3 اگست (سیاست ڈاٹ کام) 70 سے زیادہ ہندو مذہبی رہنما بشمول سوامی پرماتمانند مہاراج نے آج گذشتہ ماہ دلت نوجوانوں کی اونا میں گاؤ رکشکوں کے ایک گروپ کے ہاتھوں شدید زدوکوب کی مذمت کی۔ آر ایس ایس کی ریاستی شاخ کے ایک کارکن نے کہا کہ قائدین اونا میں جمع ہوئے تھے۔ اس جلسہ کا اہتمام ساماجک سمرجتا منچ نے کیا تھا جو آر ایس ایس کی ایک ذیلی تنظیم ہے۔ ریاستی آر ایس ایس کے ترجمان وجئے ٹھاکر نے کہاکہ ہمارا مقصد امن، فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور اتحاد کے پیغام کی اشاعت ہے۔ آر ایس ایس دلتوں پر مظالم کی سختی سے مذمت کرتی ہے اور چاہتی ہیکہ اس گھناؤنی کارروائی کے خاطیوں کے خلاف احتجاج میں ہر شخص آگ آئے۔ جلسہ میں کئی مقامی دلت قائدین شریک تھے۔ آر ایس ایس ریاست گجرات کے علاقائی سنگھ چالک مکیش ملکن اور پرماتمانند سوامی نے دیہاتی عوام سے کہا کہ آر ایس ایس قائدین نے سمیلن میں شرکت سے پہلے متاثرہ دلتوں کے ارکان خاندان سے ملاقات کی ہے۔ جلسہ میں اس واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے ایک قرارداد منظور کی گئی۔ گاؤرکشکوں کے خلاف سخت احتجاج کیا گیا اور حکومت سے خواہش کی گئی کہ ایسے عناصر کے خلاف سخت کارروائی کرے جو بے قصور افراد کو گائے کے تحفظ کے نام پر ہراساں کررہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT