Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / اوورسیز اسکالرشپ : 5 لاکھ روپئے کی پہلی قسط جاری

اوورسیز اسکالرشپ : 5 لاکھ روپئے کی پہلی قسط جاری

پہلے مرحلہ میں 236 طلباء کا انتخاب ، دوسرے مرحلے کیلئے 200 طلباء اہل
حیدرآباد۔/5اپریل، ( سیاست نیوز) بیرون ملک یونیورسٹیز میں اقلیتی طلباء کی تعلیم کیلئے شروع کردہ اوورسیز اسکالر شپ اسکیم کے پہلے مرحلہ میں 236 منتخب طلباء کو فی کس 5 لاکھ روپئے کی پہلی قسط جاری کردی گئی ہے۔ اقلیتی بہبود کے ذرائع نے بتایا کہ پہلے مرحلہ میں 210 امیدواروں کا انتخاب کیا گیا تھا بعد میں مزید 26 طلباء نے درکار شرائط کی تکمیل کی اور انہیں پہلے مرحلہ میں شامل کرلیا گیا۔ اس طرح 236 طلباء کو اسکالر شپ کی پہلی قسط ادا کردی گئی ہے۔ دوسرے مرحلہ میں محکمہ اقلیتی بہبود کو 370 درخواستیں وصول ہوئیں جن میں200طلباء کو اسکیم کیلئے اہل قرار دیا گیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ منتخب 200 طلباء کے اسنادات اور دیگر اُمور کی جانچ کا کام متعلقہ ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسر کو دیا گیا تھا اور یہ کام تقریباً مکمل ہوچکا ہے۔ تمام اضلاع سے ویریفکیشن رپورٹ موصول ہونے کے بعد اسے سنٹر فار گڈ گورننس روانہ کیا جائے گا۔ بعد میں ریاستی سطح کی سلیکشن کمیٹی درخواستوں کی جانچ کرے گی۔ ذرائع نے بتایا کہ 170 طلباء نے درکار شرائط کی تکمیل نہیں کی ہے اگر وہ مقررہ مدت کے دوران شرائط کی تکمیل کرلیں تو انہیں بھی اسکیم میں شامل کرلیا جائے گا۔ بیشتر اولیائے طلباء نے دوسرے مرحلہ کی درخواستوں کی یکسوئی میں تاخیر کی شکایت کی ہے۔ ایسے طلباء جو منتخب نہیں ہوسکے وہ درکار شرائط کے بارے میں ڈائرکٹوریٹ اقلیتی بہبود سے رجوع ہوسکتے ہیں۔ اسی دوران مالیاتی سال 2015-16میں اقلیتی بہبود کیلئے مختص کردہ بجٹ1100 کروڑ میں سے مالیاتی سال کے اختتام تک 610کروڑ روپئے جاری کئے گئے اور 566 کروڑ روپئے خرچ کئے گئے۔ حکومت نے لمحہ آخر میں فیس بازادائیگی کیلئے 36کروڑ روپئے جاری کئے جس میں سے 34کروڑ خرچ کئے گئے۔ تلنگانہ میں اقلیتی طلباء کی فیس باز ادائیگی پر 164کروڑ روپئے خرچ کئے گئے ہیں۔ مکمل خرچ کردہ بجٹ 566کروڑ میں 150 کروڑ روپئے شادی مبارک اسکیم کے شامل ہیں۔ اس طرح اقلیتی بہبود پر 416کروڑ روپئے ہی خرچ ہوئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT