Sunday , October 22 2017
Home / شہر کی خبریں / اوورسیز اسکالر شپس اسکیم ، منتخب طلبہ کو رقم کی عدم اجرائی پر سخت نوٹ

اوورسیز اسکالر شپس اسکیم ، منتخب طلبہ کو رقم کی عدم اجرائی پر سخت نوٹ

ڈسٹرکٹ مایناریٹی آفیسرس کو میموز ، جناب سید عمر جلیل کا جائزہ اجلاس ، مختلف اسکیمات پر غور و خوض
حیدرآباد۔/19نومبر، ( سیاست نیوز) حکومت نے اوورسیز اسکالر شپ اسکیم کے منتخب اقلیتی طلباء میں پہلی قسط کی اجرائی میں تاخیر کا سختی سے نوٹ لیتے ہوئے متعلقہ ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسرس کو میمو جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت نے اس اسکیم کے تحت منتخب تمام 210 اقلیتی طلباء کے اکاؤنٹ میں اسکالر شپ کی پہلی قسط جاری کرنے کیلئے 10نومبر تک کی مہلت دی تھی اور محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے تمام ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسرس کو ان کے اضلاع میں منتخب کئے گئے امیدواروں کے اعتبار سے جملہ 11کروڑ 74لاکھ روپئے جاری کئے لیکن عہدیداروں نے آج تک یہ رقم طلباء کے اکاؤنٹ میں منتقل نہیں کی۔ اس سلسلہ میں مختلف گوشوں سے شکایات ملنے پر سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے آج جائزہ اجلاس منعقد کیا اور عہدیداروں کے تساہل پر برہمی کا اظہار کیا۔ انہوں نے تمام متعلقہ عہدیداروں کو میمو جاری کرتے ہوئے فوری طور پر رقم منتقل کرنے کی ہدایت دی۔ انہوں نے کہا کہ ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسرس کو رقم کی اجرائی کے سلسلہ میں بل تیار کرتے ہوئے ڈائرکٹر ٹریژریز کے پاس داخل کرنا ہے جو ہر منتخب امیدوار کو 5لاکھ روپئے کی پہلی قسط اور ایک طرف کا فضائی کرایہ کی رقم اکاؤنٹ میں جمع کردیں گے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے بتایا کہ پہلے مرحلہ میں 210 طلباء کا انتخاب کیا گیا جن کے دستاویزات کی جانچ بھی مکمل کرلی گئی تاہم حیرت ہے کہ عہدیداروں نے رقم کی اجرائی کے باوجود اکاؤنٹ میں منتقلی کی کارروائی نہیں کی۔ اس اسکیم کے تحت حکومت نے 25کروڑ روپئے مختص کئے تھے جس میں 12کروڑ 50لاکھ روپئے جاری کردیئے گئے۔ انہوں نے بتایا کہ مزید 29 طلباء کو اس اسکیم کا اہل قرار دیا گیا ہے اور انہوں نے ڈائرکٹر اقلیتی بہبود کو ہدایت دی کہ وہ منتخب طلباء کی تفصیلات فوری طور پر داخل کریں۔ سکریٹری اقلیتی بہبود کے مطابق اسٹاف کی کمی کے پیش نظر ’ شادی مبارک ‘ اسکیم کو منڈل ریونیو آفیسرس کے تحت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ چیف منسٹر نے اس سلسلہ میں عہدیداروں کو ہدایت دی تھی۔ توقع ہے کہ بہت جلد ضلع کلکٹرس کو احکامات جاری کردیئے جائیں گے۔ متعلقہ منڈل ریونیو آفیسرس اپنے علاقہ کی ’ شادی مبارک ‘ اسکیم کی درخواستوں کی جانچ کے بعد محکمہ اقلیتی بہبود کو رپورٹ پیش کریں گے۔ اقلیتی بہبود میں حیدرآباد اور اضلاع میں اسٹاف کی کمی کے باعث اس اسکیم کی درخواستوں کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے۔ سید عمر جلیل کے مطابق ایم آر اوز کو درخواستوں کی جانچ کا کام حوالے کرنے سے زیر التواء درخواستوں کی جلد یکسوئی ہوپائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ ائمہ اور مؤذنین کو حکومت کی جانب سے ماہانہ ایک ہزار روپئے اعزازیہ کی ادائیگی کے قواعد و ضوابط کو منظوری دے دی گئی ہے اور بہت جلد اعلامیہ جاری کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ آٹو رکشا فراہمی اسکیم کیلئے اہل امیدواروں کے انتخاب کا کام جاری ہے اور جاریہ ماہ اس اسکیم پر بہر صورت عمل کیا جائے گا۔ سید عمر جلیل کے مطابق ایس سی ، ایس ٹی طبقات کے مماثل اقلیتی افراد کو 70تا80فیصد بینک سبسیڈی کی فراہمی سے متعلق اسکیم کو منظوری کیلئے چیف منسٹر کے پاس روانہ کیا گیا ہے۔ چیف منسٹر کی منظوری کے ساتھ ہی اسکیم کی تفصیلات جاری کردی جائیں گی۔

TOPPOPULARRECENT