Tuesday , September 26 2017
Home / شہر کی خبریں / اوورسیز اسکالر شپ اسکیم برائے اقلیتی طلبہ میں 20 لاکھ تک اضافہ

اوورسیز اسکالر شپ اسکیم برائے اقلیتی طلبہ میں 20 لاکھ تک اضافہ

آئندہ ماہ اعلامیہ ، چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کا فیصلہ
حیدرآباد ۔ 24 ۔اگست (سیاست نیوز)  حکومت نے چیف منسٹر اوورسیز اسکالرشپ اسکیم برائے اقلیتی طلبہ کیلئے تعلیمی امداد کی رقم میں 10 لاکھ روپئے سے اضافہ کرتے ہوئے 20 لاکھ کردیا ہے۔ تاہم اسکیم پر عمل آوری نئی درخواستوں کے حصول کے بعد عمل میں آئے گی۔ محکمہ اقلیتی بہبود کے ذرائع نے اس بات کی وضاحت کی ہے کہ تعلیمی امداد میں اضافہ کا اطلاق ابھی تک منتخب کئے گئے دو بیاچس  پر نہیں ہوگا۔ محکمہ نے تیسرے بیاچ کے لئے ستمبر کے پہلے ہفتہ میں اعلامیہ کی اجرائی کا فیصلہ کیا ہے جس کے بعد مستحق امیدوار آن لائین درخواستیں داخل کرسکتے ہیں۔ ان درخواستوں میں سے منتخب ہونے والے طلبہ کیلئے 20 لاکھ روپئے تعلیمی امداد کی اسکیم پر عمل آوری کی جائے گی۔ اس اسکیم کا آغاز 2015-16 ء سے ہوا اور ابھی تک دو بیاچس کو منتخب کیا گیا ۔ پہلے بیاچ کے طلبہ کی تعداد 282 تھی، جنہیں اس وقت کی طئے شدہ تعلیمی امداد 10 لاکھ روپئے دو مرحلوں میں جاری کردی گئی۔ دوسرے مرحلہ میں منتخب طلبہ کی تعداد 240 سے زائد ہے، جنہیں پہلی قسط جاری کردی گئی ہے ۔ دوسری قسط کی رقم صرف 5 لاکھ روپئے ہی جاری ہوگی اور نئی اضافی رقم کا اطلاق ان پر نہیں ہوگا۔ تعلیمی امداد کی رقم میں اضافہ کے بعد سے ابتدائی دونوں بیاچس کے طلبہ میں امید پیدا ہوئی تھی کہ انہیں بھی 20 لاکھ روپئے ادا کئے جائیں گے لیکن حکومت نے واضح کردیا کہ تیسرے مرحلہ میں منتخب ہونے والے طلبہ اضافی رقم کے مستحق ہوں گے ۔ 9 اگست کو جاری کردہ احکامات میں حکومت نے ایس سی طلبہ کے مماثل اقلیتی طلبہ کو بھی تعلیمی امداد میں 20 لاکھ تک اضافہ کا فیصلہ کیا ہے۔ پہلی قسط کے تحت 10 لاکھ روپئے یا تعلیمی فیس ادا کی جائے گی جس کے لئے ضروری دستاویزات داخل کرنا ہوگا۔ فرسٹ سمسٹر کی تکمیل اور نتائج کے منظر عام پر آنے کے بعد دوسری قسط جاری ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT