Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / اویسی پر کانگریس کی تنقید حق بجانب : عارف محمد خان

اویسی پر کانگریس کی تنقید حق بجانب : عارف محمد خان

نئی دہلی ۔20مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) مذہب کی طرح حب الوطنی بھی ضمیر کا معاملہ ہے ۔ جواہر لال نہرو یونیورسٹی کا واقعہ اور اویسی کے اشتعال انگیز بیانات ایک جیسے نہیں قرار دیئے جاسکتے ۔ سابق مرکزی وزیر عارف محمد خان نے کہا کہ جواہر لال نہرو یونیورسٹی کا غداری کا مقدمہ اورمدھیہ پردیش اسمبلی میں مجلس کے صدر اسد الدین اویسی کے خلاف ’جئے بھارت ماتا‘ کا نعرہ لگانے سے انکار پر قرارداد دو مختلف باتیں ہیں ۔ عارف محمد خان نے 1986ء میں راجیو گاندھی حکومت سے مسلم خواتین کے بارے میں حکومت کے فیصلہ سے اختلاف کرتے ہوئے ترک تعلق کرلیا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ اویسی پر کانگریس کی تنقید بالکل واجبی ہے کیونکہ مجلس کو قاسم رضوی کی سیاست ورثہ میں ملی ہے‘ جنہوں نے رضاکاروں کی تنظیم قائم کی تھی ۔ کانگریس بحیثیت پارٹی سیکولرازم اور قوم پرستی سے وابستہ ہے ۔ چنانچہ اویسی پر اس کی تنقید غلط نہیں ہے ۔

TOPPOPULARRECENT