Wednesday , September 27 2017
Home / سیاسیات / اُترپردیش کو بھی آسام بنانے کی سازش : جے ڈی یو

اُترپردیش کو بھی آسام بنانے کی سازش : جے ڈی یو

وارانسی، 18جون (یو این آئی) جنتا دل یونائٹیڈ (جے ڈی یو) کے جنرل سکریٹری کے سی تیاگی نے کیرانہ میں ہندوؤں کی مبینہ نقل مکانی کی سچائی کا پتہ لگانے کیلئے وزیر اعظم نریندر مودی سے کُل جماعتی ایک وفد بھیجنے کا مطالبہ کیا ہے ۔مسٹر تیاگی نے آج یہاں کہاکہ ’سب کا ساتھ، سب کا وکاس‘ کا نعرہ دے کر اقتدار میں آئے مسٹرمودی کو اترپردیش کے کیرانہ جانے سے ایسے لوگوں کو روکنا چاہئے جو مظفرنگر اور دادری کی طرح یہاں بھی تناؤ پیدا کرکے سیاسی فائدہ اٹھانے کی فراق میں طرح طرح کے حربے اختیار کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کیرانہ معاملے میں حکم سنگھ اور ضلع انتظامیہ کی رپورٹوں پر سوال اٹھ رہے ہیں۔

ایسی صورت میں بہتر ہوگا کہ پارلیمنٹ کا کُل جماعتی وفد موقع پر جا کر سچائی کا پتہ لگائے تاکہ ملک کو اس سے آگاہ کرایا جاسکے ۔جنتا دل یو کے لیڈر نے کہاکہ کیرانہ جا کر وہاں کے لوگوں سے بات چیت کرنے کے بعد انہیں لگا کہ ہندوؤں کی نقل مکانی کی بات کرنے کے پیچھے مقصد صرف سیاسی فائدہ اٹھانا ہے ۔انہوں نے کہاکہ شاید یہی وجہ ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو براہ راست اور بالواسطہ طور سے حمایت کرنے والی کچھ تنظیمیں پورے معاملے کو فرقہ وارانہ شکل دینے کی کوشش میں کیرانہ کی جانب کوچ کرنے کی بار بار کوشش کر رہے ہیں۔مسٹر تیاگی نے کہاکہ وہاں ایسی تنظیموں اور لوگوں کی سرگرمیاں تیزی سے بڑھ رہی ہیں۔ ایسا لگتا ہے کہ ہندو مسلم رنگ دینے کی کوشش کی جا رہی ہے تاکہ آسام کی طرح اترپردیش کے آئندہ اسمبلی الیکشن میں بھی سیاسی فائدہ اٹھایا جاسکے ۔انہوں نے کہاکہ پورے معاملے کو وہ راجیہ سبھا میں پرزور طریقے سے اٹھائیں گے تاکہ ملک کو حقیقت کا پتہ چل سکے ۔

TOPPOPULARRECENT