Wednesday , August 23 2017
Home / Top Stories / اُدھم پور دہشت گرد حملہ: نوید یعقوب کو کشمیر لایا گیا

اُدھم پور دہشت گرد حملہ: نوید یعقوب کو کشمیر لایا گیا

وادیٔ کشمیر میں سیکورٹی جوانوں کے ساتھ ہجوم کا تصادم، فائرنگ میں 2 زخمی

سری نگر /7 اگست (سیاست ڈاٹ کام) اُدھم پور دہشت گرد حملے میں بچ جانے والے واحد پاکستانی لشکر طیبہ کے دہشت گرد گرفتار شدہ محمد نوید یعقوب کو پوچھ گچھ اور تحقیقات کے لئے کشمیر لایا گیا۔ جموں میں پوچھ گچھ کے دوران اس نے وادی کشمیر میں جن جن مقامات کا دورہ کرنے کی اطلاع دی تھی، ان مقامات پر اسے لے جایا گیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ محمد نوید یعقوب کو سڑک کے ذریعہ کشمیر لایا گیا، کیونکہ اسے لے جانے والا ہیلی کاپٹر فنی خرابی کے باعث اُڑان نہیں بھرسکا۔ اس کے علاوہ وادی کشمیر میں موسم خراب تھا۔ 23 سالہ نوید کو ان تمام مقامات پر لے جایا گیا، جن کا اس نے ذکر کیا تھا۔ این آئی اے نے کل شام اس سے پوچھ گچھ کی ہے۔ وادی کشمیر میں ضلع پلوامہ کے کاکاپورہ ٹاؤن میں دو افراد آج اس وقت گولی سے زخمی ہوئے، جب ایک ہجوم نے پولیس اور نیم فوجی دستوں کے ساتھ جھڑپ کی۔ یہ لوگ کرفیو جیسی پابندیوں کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے سیکورٹی رکاوٹوں کو توڑنے کی کوشش کر رہے تھے۔ سینئر پولیس عہدہ دار نے کہا کہ کاکاپورہ اور متصل علاقوں میں امتناعی احکامات نافذ کئے گئے ہیں۔ انکاؤنٹر کے مقام کے قریب تلاشی مہم کو روک دیا گیا ہے، کیونکہ ملبہ سے کوئی مزید ثبوت دستیاب نہیں ہوا۔ پولیس کے ساتھ جھڑپ کے تعلق سے عہدہ داروں نے کہا کہ عوام کا ہجوم امتناعی احکام کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پولیس اور نیم فوجی دستوں پر سنگباری کر رہا تھا۔ سیکورٹی فورس کی جوابی کارروائی اور فائرنگ میں دو افراد شدید زخمی ہوئے۔ انھیں دوا خانہ میں شریک کیا گیا ہے، جن کی حالت مستحکم بتائی گئی ہے۔ حکام نے سید علی شاہ گیلانی اور شبیر احمد شاہ کو نظربند رکھا ہے اور ان پر کڑی نظر رکھی جا رہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT