Wednesday , September 27 2017
Home / اضلاع کی خبریں / اُردو کے مسائل کی عاجلانہ یکسوئی کا مطالبہ

اُردو کے مسائل کی عاجلانہ یکسوئی کا مطالبہ

چیف منسٹر اور ڈپٹی چیف منسٹر سے تحریک اُردو تلنگانہ کی نمائندگی
جگتیال۔14۔ اکٹوبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) تحریک اردو تلنگانہ کے ایک وفد نے  ریاستی چیف منسٹر  کے چندر شیکھر رائو اور ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی سے  کے سی آر کے فارم ہاوز  پر ملاقات کی اور انہیں اردو زبان وتعلیم کے  فروغ کے سلسلہ  میں  مختلف مطالبات پر مبنی ایک میمورنڈم حوالہ کیا ۔اس موقع پر چیف منسٹر اور ڈپٹی چیف منسٹر نے وفد کو تیقن دیا کہ وہ اردو زبان اور تعلیم  کے مسائل کے حل  کے لئے ضروری اقدامات کریں گے۔اس وفد میں تحریک اردو تلنگانہ  کے ریاستی صدر خان ضیاء   کے علاوہ  ٹی آر یس ریاستی  مائنارٹی سیل سکریٹری امین الحسن  ،  اٖفضل بیگ  ، محمد عارف اور دوسرے موجود تھے۔میمورنڈم میں ریاستی حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ تلنگانہ کے تمام 31 اضلاع میں اردو کو دوسری سرکاری زبان  قرار دیتے ہوئے جی او جاری کیا جائے۔تلنگانہ میں اردو کو دوسری سرکاری  زبان قرار دئے جانے کے باوجود  احکامات پر عمل آوری نہیں ہورہی ہے۔ اردو  دوسری سرکاری زبان  کی حیثیت سے عمل آوری کے لئے  با اختیار کمیٹی مقرر کی جائے یا سرکاری زبان کمیشن میں اردو کے نمائندے کو نامزد کیا جائے۔ اردو اکاڈمی کی گورننگ باڈی تشکیل دی جائے اور اس میں اردو شاعروں اور ادیبوں کو بھی مناسب نمائندگی دی جائے۔ اردو اکاڈمی کمپیوٹر سنٹرس اور لائبریریز میں ضروری انفرا اسٹرکچر فراہم کیا جائے اور اردو اکاڈمی کے ملازمین کو  ریاستی حکومت کے دیگر ملازمین کے برابر موقف عطا کیا جائے۔ اردو میڈیم سرکاری مدارس اور جونئر کالجس و ڈگری کالجس میں اساتذہ اور لکچررس  کے تقررات عمل میں لائے جائیں۔ ٹی پی پی یس سی کے تحت ہونے والے تمام  مسابقتی امتحانات میں پرچہ سوالات اردو میں بھی فراہم کئے جائیں۔ڈگری سطح پر اردو میڈیم  کی نصابی کتابوں کی طباعت کا انتظام کیا جائے۔تلگو زبان سے اردو میں ترجمہ کے لئے تلگو اردو ڈکشنری شائع کی جائے۔ آر ٹی سی  کے تمام ڈپوز  کی بسوں اور  بس اسٹیشنوں پر مقامات کے نام تلگو کے ساتھ ساتھ اردو میں بھی تحریر کرنے کی ہدایت دی جائے۔

TOPPOPULARRECENT