Tuesday , September 19 2017
Home / شہر کی خبریں / اُردو یونیورسٹی کو چٹانوں کے تحفظ کے لیے ایوارڈ

اُردو یونیورسٹی کو چٹانوں کے تحفظ کے لیے ایوارڈ

حیدرآباد، 19؍ اپریل (پریس نوٹ)  :  مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کو اپنی چٹانوں کے تحفظ کے لیے انڈین ٹرسٹ فار آرٹ اینڈ کلچرل ہیریٹیج (INTACH) کی جانب سے ایوارڈ دیا گیا ہے۔ یہ ایوارڈ توصیف نامہ اور پلیک پر مشتمل ہے۔ اس تقریب کا اہتمام کل سالار جنگ میوزیم کے آڈیٹوریم میں کیا گیا تھا۔ توصیف نامہ میں کہا گیا، ’’مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی نے اپنے کیمپس میں قدرتی مناظر کو برقرار رکھتے ہوئے اراضی کو قابل استعمال بنانے کی ایک عمدہ کوشش کی ہے۔ کیمپس میں موجود خوشنما چٹانوں اور ان کی بناوٹ کو اُجاگر کرنے کے لیے روشنی کے انتظامات کیے گئے ہیں۔ یونیورسٹی کی شان اس کے قدرتی ورثے یعنی ان چٹانوں کو اس سال کے کیلنڈر میں نہایت عمدہ طریقے سے پیش کیا گیا ہے۔ اس پروگرام کے مہمانِ خصوصی جناب ایس ستیہ نارائنا، چیئرمین ٹی ایس آر ٹی سی نے اپنے خطاب میں کہا کہ حکومت نے حال ہی میں ثقافتی ورثوں کے تحفظ کے لیے ایکٹ منظور کیا ہے۔ جناب گوپال کرشنا، ریاستی کنوینر انٹاک نے کہا کہ ہمیں اس سے متعلق لوگوں میں شعور بیداری پیدا کرنا ہے اور انہیں اس کے متعلق معلومات فراہم کرنا ہے۔ جناب سجاد شاہد، شریک کنوینر انٹاک نے ایوارڈس کی تقسیم کے دوران کہا کہ ثقافتی ورثے ہمیں اپنی قدر و منزلت بتاتے ہیں اور ایک پہچان دیتے ہیں۔ محترمہ انورادھا ریڈی، کنوینر انٹاک نے خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ نے اس سال کو ’’بین الاقوامی سال برائے فروغِ پائیدار سیاحت ‘‘ قرار دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT