Wednesday , September 20 2017
Home / دنیا / اُلفا کی بنگلہ دیش گیاس پائپ لائن کو دھماکہ سے اُڑانے کی دھمکی

اُلفا کی بنگلہ دیش گیاس پائپ لائن کو دھماکہ سے اُڑانے کی دھمکی

ہندوستانی انٹلیجنس کی اطلاع پر بیبیانہ گیاس فیلڈ پر سخت چوکسی
ڈھاکہ۔ 13 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) علیحدگی پسند ’’اُلفا‘‘ کے مخالف مذاکرات گروپ نے بنگلہ دیش کے اعظم ترین گیاس ٹرانسمیشن پائپ لائن کو دھماکہ سے اُڑا دینے کی دھمکی دی ہے جس کے بعد حکام نے ملک بھر میں سخت سکیورٹی کا اعلان کیا ہے۔ میڈیا میں ایک ہندوستانی انٹلیجنس کی رپورٹ کے حوالے سے یہ خبریں گشت کررہی ہیں۔ یونائٹیڈ لبریشن فرنٹ آف آسام (ULFA) کی پریش بروا   (Paresh Barua)والی قیادت کے گروپ نے بیبیانہ گیاس فیلڈ کے ٹرانسمیشن لائن کو دھماکے سے اُڑانے کی دھمکی دی ہے جہاں سے بنگلہ دیش کی 45% گیاس کی ضرورت پوری کی جاتی ہے۔ کثیرالاشاعت اخبار ’’سماکال‘‘ نے آج اپنے شمارہ میں ایک زبردست اسٹوری شائع کی ہے جس کے لئے ذریعہ کا حوالہ ہندوستانی انٹلیجنس ایجنسیوں سے منسوب کیا گیا ہے۔ اسٹوری میں یہ انکشاف کیا گیا ہے کہ انٹلیجنس ایجنسیوں نے حال ہی میں بروا کی الفا کمانڈر سے ٹیلیفون پر بات چیت کی ٹیاپنگ کی گئی تھی جہاں انہوں نے بنگلہ دیش کی گیاس پائپ لائن کو دھماکے سے اُڑانے کی بات کہی تھا۔ 119 کیلومیٹر طویل بیبیانہ گیاس پائپ لائن بنگلہ دیش کی طویل ترین ٹرانسمین لائن ہے جو بیبیانہ گیاس فیلڈ سے قومی گرڈ کو گیاس سربراہ کرتی ہے۔ یہ علاقہ آسام کی سرحد کے قریب واقع ہے جو دھونت سب ڈ,سٹرکٹ میں واقع ہے جس کی امریکی تیل کمپنی شیوران کے ذریعہ دیکھا بھال کی جاتی ہے۔

دوسری طرف پٹرو بنگلہ دیش کے عہدیداران جو بیرونی اور مقامی تیل کمپنیوں کے لئے گیاس پلانٹس بطور کنٹراکٹ حوالے کرتی ہے، نے ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ اسے گزشتہ ہفتہ یہ اطلاع ملی ہے اور متعلقہ عہدیداروں کے ساتھ مشاورت کرتے ہوئے شیوران کو بھی چوکس کردیا گیا ہے۔ پٹرو بنگلہ کے ڈائریکٹر ایم قمرالزماں نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے گیاس لائن کی حفاظت کے لئے حکومت سے اقدامات کرنے کی خواہش کی ہے اور شیوران کو بھی چوکس کردیا ہے کہ وہ بیبیانہ کی پیداوار اور ٹرانسمیشن نظام پر چوکسی میں اضافہ کردے۔ انہوں نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ اس سلسلے میں پٹرو بنگلہ اور شیوران کے عہدیداروں نے وزارت داخلہ کے افسران سے ملاقات کی ہے اور ساتھ ہی ساتھ سکیورٹی ایجنسیوں کے متعلقہ افسران سے بھی مشاورت کرتے ہوئے پلانٹ اور ٹرانسمیشن لائن پر سکیورٹی میں اضافہ کی ہدایت جاری کی گئی ہے۔ وزارت داخلہ کے ایک اعلیٰ سطح کے عہدیدار نے بھی توثیق کی ہے کہ دھمکیوں کے پیش نظر سکیورٹی ایجنسیوں کو سکیورٹی میں سخت اضافہ کی ہدایت دی گئی ہے کیونکہ الفا ایک ایسی تنظیم ہے جس کے پاس ماضی میں ہندوستانی گیاس پائپ لائن کو بھی سبوتاج کرنے کا ریکارڈ ہے۔ بہرحال اس کے باوجود بھی الفا کی دھمکیوں کی افادیت کی جانچ پڑتال کی جارہی ہے کیونکہ وزیر داخلہ اسدالزماں کمال نے الفا کی دھمکیوں کی افادیت پر شک و شبہ کا اظہار کیا ہے کیونکہ حکومت ہند کے ساتھ بات چیت کے پس منظر میں الفا کے کئی اعلیٰ سطح کے قائدین نے اپنے علیحدگی پسند موقف سے دستبرداری اختیار کرلی ہے۔

TOPPOPULARRECENT