Sunday , July 23 2017
Home / Top Stories / آئندہ انتخابات میں 101 تا 106 نشستوں پر کامیابی کا یقین

آئندہ انتخابات میں 101 تا 106 نشستوں پر کامیابی کا یقین

عوام حکومت کی کارکردگی سے مطمئن ۔ ٹی آر ایس مقننہ پارٹی سے چندر شیکھر راؤ کا خطاب
حیدرآباد۔ 9 مارچ (سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے یقین ظاہر کیا کہ آئندہ اسمبلی انتخابات میں ٹی آر ایس کو 101 تا 106 نشستوں پر کامیابی حاصل ہوگی۔ تلنگانہ بھون میں ٹی آر ایس لیجسلیچر پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر نے کہا کہ حکومت کی کارکردگی سے عوام مطمئن ہیں اور عوامی نمائندوں کی ذمہ داری ہے کہ عوام تک سرکاری اسکیمات کو بہتر انداز میں پہنچائیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے جن فلاحی اسکیمات کا اعلان کیا ہے، اس کے فوائد غریب اور مستحق افراد تک پہنچنے چاہئیں۔ چیف منسٹر نے ارکان اسمبلی و کونسل کو ہدایت دی کہ وہ جمعہ سے شروع ہونے والے بجٹ اجلاس میں موضوعات پر پوری تیاری کے ساتھ شریک ہوں۔ اپوزیشن کے اعتراضات اور تنقیدوں کا جواب دینے کے لئے اعداد و شمار کے ساتھ تیار رہیں۔ اجلاس میں ارکان اسمبلی و کونسل کے علاوہ ارکان پارلیمنٹ نے شرکت کی۔ لیجسلیچر پارٹی نے بجٹ اجلاس میں پارٹی کی حکمت عملی پر غور کیا ہے۔ چیف منسٹر نے ہدایت دی کہ پارٹی رکنیت سازی کا کام جلد شروع کیا جائے اور اندرون 10 یوم اس کی تکمیل کرلی جائے۔ رکنیت سازی کے سلسلے میں ہر ضلع کے لئے نشانہ مقرر کیا جانا چاہئے۔ چیف منسٹر نے ارکان اسمبلی کی کارکردگی سے متعلق پروگریس رپورٹ بھی اجلاس میں پیش کی۔ مختلف اضلاع میں وزراء کے بشمول ارکان اسمبلی کی کارکردگی کی بنیاد پر انہیں نشانات دیئے گئے ہیں۔ عادل آباد ضلع میں کونیرو کونپا 70 نشانات کے ساتھ سرفہرست رہے جبکہ اوڈیلو 65، چنیا 64، کے لکشمی 62، وٹھل ریڈی 62، اندرا کرن ریڈی 58، جوگو رامنا 38، دیواکر راؤ 32 اور ریکھا نائیک کو صرف 30 نشانات حاصل ہوئے۔ اس ضلع میں دونوں وزراء اندرا کرن ریڈی اور جوگو رامنا کی کارکردگی غیراطمینان بخش ثابت ہوئی ہے۔ کھمم ضلع میں ریاستی وزیر ٹی ناگیشور راؤ سرفہرست رہے۔ لیجسلیچر پارٹی نے وزراء کو بھی مشورہ دیا کہ وہ اپوزیشن کے سوالات کا جواب دینے کیلئے پوری تیاری کے ساتھ ایوان میں موجود رہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT