Wednesday , August 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / آئی پی ایل میچز کی منتقلی پانی کی قلت کا حل نہیں

آئی پی ایل میچز کی منتقلی پانی کی قلت کا حل نہیں

یہ کسی ایک ریاست کی صورتحال نہیں، مسئلہ کی جڑ تک پہنچنا پڑے گا، لکشمن کے تاثرات
حیدرآباد ، 7 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام) خشک سالی سے متاثرہ مہاراشٹرا میں انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) کے مقابلوں کیلئے کرکٹ پچس کی دیکھ بھال کے ضمن میں پانی کے بڑی مقدار میں استعمال پر ہنگامہ کے درمیان سن رائزرس حیدرآباد کے مینٹور وی وی ایس لکشمن نے آج کہا کہ میچز کی منتقلی اُس کا کوئی حل نہیں جو اِن دنوں قومی مسئلہ ہے۔ انھوں نے یہاں ایک ایونٹ کے موقع پر میڈیا سے کہا: ’’میں نہیں سمجھتا کہ یہ کوئی حل ہے۔ آپ کو اصل مسئلہ کی جڑ تک پہنچنا پڑے گا۔ جیسا کہ میں نے کہا، ابھی تک خراب مانسون رہا ہے۔ یہ کسی ایک ریاست کا مسئلہ نہیں بلکہ سارے ملک کو درپیش ہے۔ لہٰذا ممبئی سے (میچز کی) منتقلی کوئی حقیقی حل نہیں ہوگا۔‘‘ یہ دعویٰ کرتے ہوئے کہ پانی کی قلت عالمی حدت اور تبدیلیٔ آب و ہوا کا شاخسانہ ہے، لکشمن نے کہا کہ یہ ایسا رجحان ہے جو سارے ملک پر اثرانداز ہوتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ بنیادی سبب کی نشاندہی کی جائے، ’’اور مجھے یقین ہے حکومت اس کا جائزہ لے رہی ہے اور متعلقہ محکمہ جات کو تمام تر احتیاطی اقدامات کرنے پڑیں گے تاکہ اس کا وقوع نہ ہونے پائے۔ کیونکہ یہ مسئلہ تو پیش آنے ہی والا ہے۔ ہم نے عالمی حدت دیکھی ہے۔ اس کے بڑے اثرات میں تبدیلیٔ آب و ہوا نمایاں ہے جو بالواسطہ طور پر پانی پر اثر ڈالتا ہے۔ ہم نے ماضی میں ایسا ہوتے دیکھا ہے۔ اس سے سارا ملک متاثر ہوتا ہے، ایک یا دو شہر نہیں۔‘‘ لکشمن نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ آئی پی ایل نوجوان کرکٹرز کو تجربہ کار کھلاڑیوں سے سیکھنے میں مدد دینے کے علاوہ اس ملک کی معیشت میں اضافہ بھی کرتی ہے۔ ’’مجھے کسانوں کے مصائب کا اندازہ ہے۔ مگر میچز کی منتقلی کوئی حل نہیں۔‘‘

TOPPOPULARRECENT