Sunday , June 25 2017
Home / Top Stories / آرمی نے پتھراؤ سے بچنے انسانی ڈھال استعمال کی، کشمیر میں شدید غم و غصہ

آرمی نے پتھراؤ سے بچنے انسانی ڈھال استعمال کی، کشمیر میں شدید غم و غصہ

جیپ سے نوجوان کو باندھ دیا گیا، سوشیل میڈیا پر ویڈیو کلپ پھیل گیا، سابق چیف منسٹر عمر عبداللہ کا انکوائری کرانے کا مطالبہ

سرینگر 14 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) آرمی نے آج کہاکہ وہ ایک ویڈیو کی تحقیقات کررہی ہے جس میں ایک نوجوان کو مبینہ طور پر ایک آرمی جیپ سے بندھا ہوا دکھایا گیا تاکہ پتھراؤ کے خلاف اُسے انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کیا جاسکے۔ دفاع کے ترجمان نے یہاں بتایا کہ آرمی جیپ سے ایک نوجوان کو باندھے جانے سے متعلق ویڈیو کے سلسلہ میں جانچ کی جارہی ہے اور معاملہ کی تہہ تک پہنچا جائے گا۔ سابق چیف منسٹر عمر عبداللہ نے اِسے صدمہ انگیز قرار دیتے ہوئے کہاکہ اِس سے عوام مشتعل ہوں گے کیوں کہ یہ ویڈیو سوشیل میڈیا پر تیزی سے پھیل چکا ہے۔ یہ ویڈیو بتایا جاتا ہے کہ ضلع بڈگام کے بیروا علاقہ میں ریکارڈ کیا گیا جہاں شرپسندوں نے سرینگر لوک سبھا حلقہ کیلئے اتوار کے ضمنی چناؤ کے دوران سنگباری کے ذریعہ پولنگ درہم برہم کی تھی۔ اِسے کشمیر میں سوشیل نیٹ ورکس پر بڑے پیمانے پر پھیلایا جارہا ہے اور ہر گوشے سے مذمت ہورہی ہے۔ عمر عبداللہ نے ٹوئٹر پر لکھا کہ نوجوان شخص کو آرمی جیپ کے اگلے حصہ سے باندھ دیا گیا تاکہ یقینی ہوجائے کہ جیپ پر پتھراؤ نہ ہو۔ یہ عجیب قسم کا واقعہ ہے۔ نیشنل کانفرنس لیڈر جو ریاستی اسمبلی میں پیروا حلقہ کی نمائندگی کرتے ہیں، اُنھوں نے کہاکہ اُنھیں اندازہ ہے کہ سی آر پی ایف والوں کو احتجاجیوں سے جو پریشانی ہوئی اُس کے ویڈیو نے ملک بھر میں برہمی پیدا کی ہے لیکن اُنھیں اِس نوجوان کے ویڈیو سے کہیں زیادہ جھلاّہٹ ہوئی جسے جیپ سے باندھ دیا گیا۔ عمر عبداللہ نے اِس واقعہ کی انکوائری کا مطالبہ کیا۔ اُنھوں نے مزید کہاکہ یہ دراصل سنگباری کرنے والوں کے لئے یہ انتباہ دیا ہے کہ اُن کا یہی حشر ہوگا۔ اِس معاملہ کی فوری انکوائری اور ضروری کارروائی درکار ہے۔ اِس دوران جموں و کشمیر ڈی جی پی ایس پی وید نے اتوار کو بڈگام میں بعض نوجوانوں کی شرپسندی پر سی آر پی ایف جوانوں کے تحمل کی ستائش کرتے ہوئے کہاکہ دنیا کی کوئی بھی دیگر مسلح فورس طاقت کے ساتھ جوابی کارروائی کی ہوتی۔ گزشتہ روز پولیس نے سی آر پی ایف کی شکایت پر ایک ایف آئی آر درج کیا جوکہ ایک ویڈیو کلپ سے متعلق ہے جس میں بعض نوجوان اِس کے جوانوں کو مار پیٹ کررہے ہیں۔ یہ واقعہ 9 اپریل کو سرینگر پارلیمانی حلقہ کے لئے ضمنی چناؤ کے دوران پیش آیا۔ ڈائرکٹر جنرل آف پولیس وید نے نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ ہم نے سی آر پی ایف جوانوں سے دھکم پیل اور مار پیٹ کرنے والوں کے خلاف  چدورا پولیس اسٹیشن میں ایف آئی آر درج کرایا ہے۔ اس معاملہ سے قانون کے مطابق نمٹا جائے گا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT