Monday , April 24 2017
Home / ہندوستان / آر ایس ایس کا نظریہ اور پروپگنڈہ ناقابل قبول

آر ایس ایس کا نظریہ اور پروپگنڈہ ناقابل قبول

ملک کو ہندو راشٹرا بنانے پر کشمیر کی علیحدگی، ڈاکٹر فاروق عبداللہ کا انتباہ

سرینگر۔16 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیر دفاع منوہر پاریکر کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے آج کہا ہے کہ اگر وہ یہ سوچتے ہیں کہ کرنسی نوٹوں کی منسوخی اور بورڈ امتحانات کی وجہ سے وادی کشمیر میں جاریہ بدامنی اور اضطراب ختم ہوگیا ہے یہ ان کی غلط فہمی ہے۔ ممکن ہے کہ یہ شورش دوبارہ برپا ہوسکتی ہے۔ آر ایس ایس سربراہ موہن بھگوت کے ریمارکس کا حوالہ دیتے ہوئے عبداللہ نے کہا کہ اگر ہندوستان کو ہندو راشٹر بنادیا گیا تو کشمیر ملک کا اٹوٹ حصہ باقی نہیں رہے گا۔ انہوں نے پارٹی ہیڈکوارٹرس نوائے صبح میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے اگر وزیر دفاع یہ تصور کرتے ہیں کہ کشمیر میں بورڈ امتحانات اور کرنسی کے تبادلے (منسوخی) سے تشدد اور تصادم کی لہر ختم ہوجائے گی یہ ان کی غلط فہمی ہے جبکہ تشدد کی آگ ٹھنڈی نہیں ہوئی ہے۔ امتحانات کے بعد دوبارہ یہ آگ بھڑکے گی اور بہت جلد دیکھا جائے گا کہ احتجاج کی لہر پھر ایک بار بلند ہوگی۔ واضح رہے کہ وزیر دفاع پاریکر نے حال ہی میں کہا تھا کہ اعلی قدر کے نوٹ منسوخ کئے جانے کے بعد دہشت گردوں کو مالیہ کی فراہمی میں نمایاں کمی آگئی ہے

جس کے نتیجہ میں سکیوریٹی فورسس پر سنگباری کا کوئی واقعہ پیش نہیں آرہا ہے۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ مجھے بے حد افسوس ہے کہ وزیر دفاع نے غلط بیان دیا ہے۔ بلاشبہ اسکولی طلباء 50 فیصد رعایت کی خاطر امتحانات میں شریک ہیں لیکن یہ 50 فیصد رعایت کون دیں گے؟ جبکہ یہ بچے سمجھتے ہیں کہ رعایتی نشانات ملنے سے کامیاب ہوجائیں گے۔ موہن بھاگوت کے بیان کا تذکرہ کرتے ہوئے صدرنیشنل کانفرنس نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ دستور کے خلاف اظہار خیال کرنے پر کارروائی کی جائے دستور کے مطابق ہندوستان ایک سیکولر ملک ہے نہ کہ ہندو راشٹر ہے۔ اگر وہ (بھاگوت) ہندو راشٹر تصور کرتے ہیں تو یہ دستور کے مغائر ہے۔ مرکز کو چاہئے کہ ان کے خلاف کارروائی کریں کیوں کہ ہر ایک مذہب کو یہاں مساوی مواقع دستیاب ہے۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ اگر موہن بھگوت کہتے ہیں کہ ہندوستان ایک ہندو راشٹر ہے تو پھر میں یہ کہنے پر مجبور ہوں کہ کشمیر ملک کا حصہ برقرار نہیں رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ آر ایس ایس کا نظریہ اور پروپگنڈہ نیشنل کانفرنس کے لئے ہرگز قابل قبول نہیں ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT