Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھراپردیش حج کمیٹی کو تلنگانہ پر بھروسہ نہیں

آندھراپردیش حج کمیٹی کو تلنگانہ پر بھروسہ نہیں

ایگزیکٹیو آفیسر آندھراپردیش حج کمیٹی لیاقت علی کا بیان
حیدرآباد۔20 جولائی (سیاست نیوز) آندھراپردیش حج کمیٹی کو حج ہائوز نامپلی میں حج کیمپ کے انتظامات پر بھروسہ نہیں ہے لہٰذا اس نے اپنے عازمین کے لیے حج ہائوز سے متصل ہوٹلوں میں قیام و طعام کی سہولت فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تلنگانہ کے عازمین کے لیے حج ہائوز اور اس سے متصل زیر تعمیر کامپلکس میں قیام کے انتظامات کئے جارہے ہیں۔ گزشتہ سال آندھراپردیش کے عازمین اسی کیمپ سے روانہ ہوئے تھے لیکن انہوں نے قیام کے سلسلہ میں نامناسب انتظامات کی شکایت کی جس پر آندھراپردیش حج کمیٹی نے حج ہائوز کے اطراف 7 ہوٹلیں کرائے پر حاصل کی ہیں جہاں آندھرا کے عازمین کا قیام رہے گا۔ ایگزیکٹیو آفیسر آندھراپردیش حج کمیٹی لیاقت علی نے بتایا کہ عازمین کو ہوٹلوں میں کھانا سربراہ کیا جائے گا اور وہ روانگی اور ضروری سرکاری امور کی تکمیل کے لیے حج ہائوز پہنچیں گے۔ حج ہائوز سے وہ خصوصی آر ٹی سی بسوں میں ایرپورٹ کے لیے روانہ ہوں گے۔ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ سال کے انتظامات سے آندھراپردیش حکومت مطمئن نہیں ہے لہٰذا اس نے عازمین کو ہوٹلوں میں ٹھہرانے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہیں امید ہے کہ آئندہ سال سے آندھراپردیش کے عازمین وجئے واڑہ سے روانہ ہوں گے۔ اسی دوران آندھراپردیش کے حج کمیٹی کے اس فیصلے کے بارے میں جب ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی سے سوال کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ آندھراپردیش کے پاس زائد پیسہ ہے اسی لیے وہ ہوٹلوں میں ٹھہرارہے ہیں۔ واضح رہے کہ آندھراپردیش حج کمیٹی کو حکومت نے عازمین کے انتظامات کے لیے 3 کروڑ روپئے مختص کئے اس کے علاوہ 12 کروڑ روپئے حج ہائوز کی تعمیر کے لیے فراہم کئے گئے۔

TOPPOPULARRECENT